The news is by your side.

Advertisement

سرفراز واقعے نے کھلاڑیوں کی ہر سطح پر تعلیم کی اہمیت بڑھا دی ہے: پی سی بی

لاہور: قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کے واقعے پر پی سی بی نے اپنا ردِ عمل ظاہر کر دیا ہے، قومی کرکٹ بورڈ نے نسلی تعصب پر مبنی تبصروں کو نا قابلِ برداشت قرار دے دیا۔

تفصیلات کےمطابق پاکستان اور جنوبی افریقا کے درمیان ہونے والے دوسرے ون ڈے میچ کے دوران سرفراز احمد نے جنوبی افریقی بلے باز پھلوکوایو پر نسل پرستانہ جملے کسے تھے۔

سرفراز قابلِ اعتماد کرکٹر ہے مگر بہ طور کپتان انھوں نے جو کیا وہ درست نہیں۔

ترجمان پی سی بی

ڈربن واقعے پر پاکستان کرکٹ بورڈ نے اظہارِ افسوس کرتے ہوئے کہا کہ نسلی تعصب پی سی بی کے لیے نا قابلِ برداشت ہے، کپتان کے کلمات پر افسوس ہوا۔

پی سی بی کے ترجمان نے کہا کہ سرفراز احمد کے کلمات کی کسی طور پر حمایت نہیں کی جا سکتی، واقعے نے کھلاڑیوں کی ہر سطح پر تعلیم کی اہمیت بڑھا دی ہے۔

پی سی بی کا کہنا ہے کہ سرفراز قابلِ اعتماد کرکٹر ہے مگر بہ طور کپتان انھوں نے جو کیا وہ درست نہیں، امید ہے سرفراز احمد سے متعلق واقعے کا سیریز پر اثر نہیں پڑے گا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز دوسرے ون ڈے میچ میں پاکستان کے ہاتھوں سے میچ نکلنے کے بعد کپتان سرفراز احمد دل بر داشتہ ہوئے اور جنوبی افریقا کے بلے باز پھلوکوایو پر نسل پرستانہ جملے کس دیے۔

یہ بھی پڑھیں:  سرفراز احمد کو نسل پرستانہ جملے کسنا مہنگا پڑ گیا، پابندی کی تلوار لٹکنے لگی

میچ ریفری رنجن مدھگالے نے اپنی رپورٹ آئی سی سی کو بھیج دی ہے، جس پر سرفراز احمد کو آئی سی سی کی جانب سے تین سے پانچ میچوں کی پابندی کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔

واضح رہے کہ قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے جنوبی افریقی کھلاڑی پر نسل پرستانہ جملے کسنے پر سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر معافی بھی مانگ لی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں