The news is by your side.

Advertisement

قومی اسمبلی کا اجلاس تحریک عدم اعتماد پر کارروائی کے بغیر پیر تک ملتوی

اسلام آباد : قومی اسمبلی کا اجلاس وزیراعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر کارروائی کے بغیر پیر تک ملتوی کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کا اہم اجلاس اسپیکر اسد قیصر کی زیر صدارت شروع ہوا، اجلاس کے آغاز تلاوت کلام پاک سے کیا گیا۔

جس کے بعد اسپیکر قومی اسمبلی نے پی ٹی آئی کے ایم این اے خیال زمان ، سابق صدر رفیق تارڑ ، پشاور دھماکے کے شہداء سمیت دیگر وفات پانے والوں کیلئے فاتحہ خوانی کرائی۔

اجلاس میں شرکت کے لئے اپوزیشن لیڈر شہباز شریف آصف زرداری، راجہ پرویز اشرف، احسن اقبال اور دیگر ارکان ایوان میں موجود تھے ، اپوزیشن کے 162 میں سے 159 اجلاس میں شریک ہوئے۔

پی پی کےجام عبدالکریم دبئی میں ہونے کے باعث اجلاس میں شریک نہیں ہوئے جبکہ پی ٹی ایم کےعلی وزیر جیل میں اورجماعت اسلامی کےاکبر چترالی غیر حاضر تھے۔

معزز ممبر کے انتقال پر قومی اسمبلی کا اجلاس پیر کی شام 4بجے تک ملتوی کردیا گیا ، اسپیکرقومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا یہ اسمبلی کی روایت ہے معزز رکن کے انتقال کے احترام میں فاتحہ خوانہ کے بعد ایجنڈا مؤخر کرکے اجلاس ملتوی کردیا جاتا ہے۔

اسپیکرقومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ ایسا پہلی بار نہیں ہورہا ، ماضی میں بھی 24 بار قومی اسمبلی کااجلاس روایت کےتحت ملتوی کیا گیا جبکہ موجودہ اسمبلی میں بھی اس روایت کے تحت5باراجلاس ملتوی ہوچکا ہے۔

اسد قیصر نے واضح کیا کہ وزیراعظم کے خلاف تحریکِ عدم اعتماد پر آئین اور اسمبلی قواعد کے مطابق عمل کیا جائے گا۔

قومی اسمبلی کا اجلاس ملتوی کرنے پر اپوزیشن ارکان کا شور شرابا کیا اور اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے مائیک پر بولنے کی کوشش بھی کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں