The news is by your side.

یورپی ملک میں غیر قانونی تارکین کو روکنے کیلئے جاسوسی نظام

برسلز: غیر قانونی تارکین کی بڑی تعداد میں آمد سے پریشان یورپی ملک نے الیکٹرانک آلات لگانے کا اعلان کردیا ہے

تفصیلات کے مطابق یورپی یونین کے رکن ممالک میں آبادی کے تناسب کے لحاظ سے سب سے زیادہ تارکین رکھنے والے ملک سائپرس یعنی قبرص تمام تر کوششوں کے باوجود قبرص کے تُرک زیرِ کنٹرول حصے سے بارڈر پار کرکے غیر قانونی تارکین کی ملک میں آمد کو روکنے میں ناکام ہے۔

تاہم اب سائپرس حکومت نے اعلان کیا ہے کہ وہ سرحد پر الیکٹرانک  سرویلنس آلات لگانے جارہی ہے جس سے غیرقانونی تارکین کی نقل و حرکت پر نظر رکھی جاسکے گی اور انہیں ملک میں داخل ہونے سے روکا جاسکے گا۔

حکومتی ترجمان کا کہنا ہے کہ ترُک زیر کنٹرول سائپرس سے آنے والے غیرقانونی تارکین کی تعداد میں جنوری سے اپریل کے درمیان 184 فیصد اضافہ ہوا ہے سرحد پر نقل وحرکت کی نگرانی کرنے والے جدید آلات 180 کلومیٹر کا بارڈر کور کریں گے۔

حکام کا کہنا ہے کہ سائپرس آنے والے بیشتر تارکین میں شامی، پاکستانی، انڈین، بنگلہ دیشی، نائجیرین اور صومالی شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں