The news is by your side.

Advertisement

70 لاکھ بینک صارفین کا حساس ڈیٹا ڈارک ویب پر لیک

نئی دہلی: 70 لاکھ بھارتی بینک صارفین کا حساس ڈیٹا لیک ہو گیا جس میں ای میل آئی ڈیز سمیت صارفین کی نجی معلومات شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق انٹرنیٹ سیکورٹی ریسرچ نے انکشاف کیا ہے کہ ستر لاکھ بھارتی ڈیبٹ اور کریڈٹ کارڈ ہولڈرز کے فون نمبرز، ای میل آئی ڈیز سمیت نجی معلومات ڈارک ویب پر گردش کر رہی ہیں۔

آن لائن بینکنگ نے لاکھوں صارفین کو خطرے سے دوچار کر دیا ہے، یہ ڈیجیٹل بینکنگ سے متعلق بڑا انکشاف قرار دیا جا رہا ہے، جس میں کہا گیا ہے کہ لیک ہونے والی معلومات میں صارفین کے نام، فون نمبرز، ای میل آئی ڈیز سمیت ان کی سالانہ آمدنی وغیرہ شامل ہیں۔

اس سلسلے میں سیکورٹی کے ریسرچر راجیش کھیر راجا ہریا نے دعویٰ کیا ہے کہ ڈارک ویب پر تقریباً 2 جی بی کا ڈیٹا بیس لیک ہوا ہے جس میں صارفین کے اکاؤنٹ کی تفصیلات سمیت تمام معلومات موجود تھیں۔

مزید بتایا گیا کہ مذکورہ ڈیٹا 2010 سے 2019 کے درمیان کا ہے، جو کہ ہیکرز اور اسمگلرز کے لیے بہت مفید ثابت ہو سکتا ہے، کیوں کہ ڈیٹا مالی اعداد و شمار پر مبنی ہے، جس کی مدد سے وہ صارفین کو بہت نقصان پہنچا سکتے ہیں۔

یہ انکشاف بھی ہوا ہے کہ ڈیٹا لیک کرنے میں کوئی تیسری پارٹی ملوث ہے، جس سے بینک نے کریڈٹ ڈیبٹ کارڈ فروخت کرنے کا معاہدہ کیا تھا۔

بتایا گیا کہ لیک ہونے والے ڈیٹا میں تقریباً 5 لاکھ کارڈ ہولڈرز کے پین نمبر بھی شامل ہیں۔

واضح رہے کہ فنانشل ڈیٹا انٹرنیٹ کا سب سے مہنگا ڈیٹا ہوتا ہے، اس سلسلے میں راجا ہریا کا کہنا تھا کہ مذکورہ ڈیٹا حقیقی تھا یا نہیں، ابھی یہ واضح نہیں ہوا، تاہم خدشہ ہے کہ کسی نے یہ ڈارک ویب پر فروخت کیا اور پھر یہ پبلک ہو گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں