جمعرات, مئی 23, 2024
اشتہار

بیٹی نے ماں کو قتل کر کے لاش کے ٹکڑے گھر میں چھپا دیے

اشتہار

حیرت انگیز

نئی دہلی: بھارت میں 23 سالہ بیٹی نے اپنی ماں کو قتل کر کے لاش کے ٹکڑے کردیے اور کئی ماہ تک گھر میں ہی چھپائے رکھے، پولیس نے قاتلہ کو گرفتار کرلیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق پولیس نے خاتون وینا پرکاش کی لاش کے ٹکڑے گھر کی الماری اور باتھ روم ڈرم سے برآمد کرکے ماں کے قتل کے الزام میں بیٹی رمپل جین کو گرفتار کرلیا۔

قتل کی جانے والی خاتون وینا پرکاش اپنی بیٹی رمپل جین کے ساتھ رہائش پذیر تھیں، وینا کو آخری مرتبہ 26 دسمبر کو اپنی پڑوسی کے ساتھ دیکھا گیا جس کے بعد وینا کے بھائی کی جانب سے بہن کی گمشدگی کی درخواست دائر کی گئی تھی۔

- Advertisement -

پولیس جب وینا کے گھر انہیں ڈھونڈنے پہنچی تو کسی نے ڈور بیل کے باوجود دروازہ نہ کھولا جس کے بعد خاتون کے بھائی پورول نے پڑوسیوں کے ساتھ مل کر بہن کے گھر کا دروازہ توڑا۔

پورول اور پڑوسیوں نے گھر میں وینا کی بیٹی کو گندی حالت میں پایا جسے دیکھ کر محسوس ہو رہا تھا کہ رمپل کئی دن سے نہائی بھی نہیں۔

بعد ازاں جب ان سے والدہ کے حوالے سے پوچھا گیا تو انہوں نے کہا کہ وہ بیڈ پر موجود ہیں لیکن جب بیڈ پر دیکھا گیا تو وہاں چادر کے نیچے تکیے موجود تھے۔

گھر میں پھیلی بدبو کے باعث پولیس نے تلاشی لی اور وینا کا سر اور دھڑ الماری سے برآمد کرلیا۔ وینا کے اعضا کو ساڑھی میں چھپا کر الماری میں رکھا گیا تھا جبکہ ان کے ہاتھ پاؤں کو باتھ روم میں ڈرم میں چھپایا گیا تھا۔

پولیس کے مطابق وینا کو کسی دھاری دار چیز سے قتل کیا گیا تھا، تلاشی کے دوران ماربل کٹر اور آری بھی دریافت کی گئی۔

لاش کے ٹکڑے گل چکے تھے جنہیں دیکھ کر لگ رہا تھا کہ انہیں چھپائے ہوئے مہینہ گزر گیا ہو، گھر سے تعفن دور کرنے کے لیے رمپل پرفیوم اور ایئر فریشنر کا استعمال کر رہی تھی۔

پولیس کے مطابق رمپل نے اپنے والد کو 20 سال کی عمر میں کھو دیا تھا، گرفتاری کے بعد رمپل نے اپنی والدہ کو قتل کرنے کا اعتراف کیا تاہم اس کی کوئی وجہ نہیں بتائی۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں