The news is by your side.

Advertisement

معروف اداکار خیّام سرحدی کا تذکرہ

پاکستان ٹیلی ویژن کے معروف اداکار اور سینئر فن کار خیّام سرحدی 3 فروری 2011ء کو انتقال کرگئے تھے۔ آج ان کی برسی منائی جارہی ہے۔

ٹی وی اداکار خیام سرحدی کے والد اپنے زمانے کے نام ور اور باکمال ہدایت کار تھے جنھوں‌ نے ”ہم لوگ” اور ”فٹ پاتھ” جیسی شاہ کار فلمیں بنائی تھیں۔ انہی کی بدولت خیّام سرحدی فن اور آرٹ کی دنیا کی طرف متوجہ ہوئے اور یہ شوق گویا انھیں ورثے میں ملا تھا۔

ان کا شمار منجھے ہوئے اداکاروں میں ہوتا تھا۔ حکومت نے انھیں فنی خدمات کے اعتراف میں پرائڈ آف پرفارمنس سے بھی نوازا تھا۔

خیّام سرحدی ممبئی میں پیدا ہوئے تھے جہاں ان کے والد فلمی صنعت میں‌ اپنی قسمت آزمائی کے لیے مقیم تھے۔ بعد میں ان کا خاندان ہجرت کے لاہور آگیا اور یہاں سے وہ کراچی منتقل ہوگئے۔

وارث، ریزہ ریزہ، من چلے کا سودا، دہلیز، لازوال، سورج کے ساتھ ساتھ اور کئی دوسرے ڈراموں میں خیّام سرحدی نے اپنے کرداروں کو حقیقت کا رنگ دے کر ناظرین سے داد وصول کی۔ ان کے کردار بہت مقبول ہوئے۔ اداکار نے تین فلموں ’’اک سی ڈاکو‘‘،’’بوبی‘‘ اور ’’مہک‘‘ میں بھی کام کیا تھا۔

پاکستان ٹیلی ویژن کے اس معروف اداکار نے امریکا سے تعلیم حاصل کرنے کے بعد ستّر کے دہائی میں ڈرامہ ’ْایک تھی مینا‘ سے اپنے فنی سفر کا آغاز کیا تھا۔ خیّام سرحدی نے تحریکِ پاکستان کے پس منظر میں اور قائدِ اعظم کی زندگی پر بننے والی ایک دستاویزی فلم میں مسلمانوں کے مقبول راہ نما سردار عبدالرّب نشتر کا کردار بھی ادا کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں