The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹر کی غفلت سے ڈی آئی جی کی والدہ کا انتقال، ہیلتھ کیئر کمیشن حرکت میں آ گیا

کراچی: شہر قائد میں ڈاکٹر کی غفلت کے باعث ڈی آئی جی ایڈمن سندھ پولیس عاصم قائمخانی کی والدہ کے انتقال پر ہیلتھ کیئر کمیشن نے نجی اسپتال سے تمام ڈیٹا طلب کر لیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق گزشتہ ماہ کراچی کے ایک نجی اسپتال میں ڈاکٹر کی غفلت کے باعث ڈی آئی جی عاصم قائمخانی کی والدہ انتقال کر گئی تھیں، جس پر انھوں نے ڈاکٹروں اور اسپتال کے خلاف سندھ ہیلتھ کئیر کمیشن کو خط لکھ دیا تھا۔

خط پر سندھ ہیلتھ کئیر کمیشن حرکت میں آ گیا، کمیشن نے نجی اسپتال سے ڈی آئی جی کی والدہ کا تمام ڈیٹا طلب کر لیا ہے، اسپتال انتظامیہ سے ڈاکٹر اور عملے کی تمام تفصیلات طلب بھی کرلی گئیں۔

واقعے کی تحقیقات کے لیے ایک کمیٹی بھی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جس میں مختلف اسپتالوں کے ماہر امراض قلب کو شامل کیا جائے گا، امراض قلب کے ماہرین کی ٹیم کی تشکیل کے بعد واقعے کی تفتیش شروع کی جائے گی۔

اس سلسلے میں این آئی سی وی ڈی اور آغا خان کے ماہرین کے لیے اسپتالوں کو خط لکھ دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ ڈی آئی جی کی والدہ کو معمولی پیٹ کی تکلیف پر اسپتال منتقل کیا گیا تھا، لیڈی ڈاکٹر نے دل کا دورہ بتا کر انجیوگرافی اور انجیوپلاسٹی کی، دوران علاج غفلت و لاپرواہی سے آنت کو نقصان پہنچا، ڈی آئی جی کا کہنا تھا کہ ڈاکٹر نے اس واقعے کو چھپایا، آپریشن کے چند روز بعد اچانک والدہ کی طبیعت بگڑی اور ان کا انتقال ہوگیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں