The news is by your side.

Advertisement

انجنیئرنگ کے طلبہ کے امتحان سے متعلق بڑا فیصلہ

اسلام آباد: وزرات تعلیم نے پاکستان کے تمام طلبہ کو ای کیٹ یا انجنیئرنگ کا امتحان دینے کی اجازت کا فیصلہ کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق بدھ کو اسلام آباد میں وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت انجنیئرنگ یونیورسٹیز میں داخلوں پر اجلاس منعقد ہوا، جس میں پاکستان انجنیئرنگ کونسل (پی ای سی)، انجنیئرنگ یونیورسٹیز کے وی سیز، اور ہائر ایجوکیشن کمیشن (ایچ ای سی) کے عہدے دار شریک ہوئے۔

مشاورتی اجلاس میں کو وِڈ 19 کی وجہ سے تعلیمی سال اور امتحانات مؤخر ہونے کے سبب انجنیئرنگ یونیورسٹیز میں بروقت داخلے کو یقینی بنانے اور طلبہ کے سال کو ضائع ہونے سے بچانے کے لیے مختلف آپشنز پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

انجینئرنگ کونسل اور ایچ ای سی کے اجلاس میں متفقہ فیصلہ ہوا کہ تمام طلبہ جن کا انٹرمیڈیٹ کا امتحان ہو چکا ہوگا یا ابھی ہونا ہوگا، سب کو ای کیٹ امتحان / انجنیئرنگ کے امتحان میں بیٹھنے کی اجازت ہوگی۔

کیمبرج کے A2 کے طلبہ کو بھی ای کیٹ اور انجنیئرنگ کے داخلہ امتحانات میں بیٹھنے کی اجازت ہوگی، اور یونیورسٹیز ان کو پروویژنل ایڈمیشن دیں گی، جو کہ ان کے فائنل امتحان سے مشروط ہوگا، جن کا نتیجہ جنوری میں متوقع ہے۔

وزارت تعلیم کے مطابق طالب علم کو انجنیئرنگ امتحان میں بیٹھنے سے روکا نہیں جائے گا، اجلاس میں شفقت محمود نے کہا طلبہ اور تعلیمی اداروں کے لیے رواں سال غیر معمولی نوعیت کا سال ہے، اس لیے ہمیں غیر معمولی فیصلے لینے پڑے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں