The news is by your side.

Advertisement

الیکٹرانک ووٹنگ کے معاملے پر پارلیمنٹ کی مشترکہ کمیٹی بنانے کا فیصلہ

الیکٹرانک ووٹنگ کے معاملے پر حکومت نے پارلیمنٹ کی مشترکہ کمیٹی قائم کرنےکا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق الیکٹرانک ووٹنگ کے معاملے پر پارلیمنٹ کی مشترکہ کمیٹی قائم کرنے پر غور کیا جارہا ہے ‏اور آئندہ دنوں میں اس حوالے اہم پیش رفت متوقع ہے۔

کمیٹی قائم کرنے کا فیصلہ مشیرپارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان کی وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے بعد ‏سامنے آیا، ڈاکٹربابر عوان نے اسپیکرقومی اسمبلی اسدقیصر سے بھی معاملے پر مشاورت کی ہے۔

ای وی ایم، آئی ووٹنگ ،الیکٹورل ریفارم بل، جوائنٹ پارلیمانی کمیٹی کےقیام پر مشاورت کی جائے گی۔ اس حوالے ‏سے حکومت اور اپوزیشن میں مسلسل رابطےجاری ہیں۔

مشیر پارلیمانی امور بابراعوان نےگزشتہ روز پریس کانفرنس میں کمیٹی کےقیام کاعندیہ دیا تھا۔

حکومت نے اعلان کیا ہے کہ اگلے انتخابات نئی مردم شماری اور الیکٹرانک ووٹنگ کے ساتھ ہوں‌ گے۔ فاقی وزیر ‏اطلاعات فواد چوہدری نے کابینہ اجلاس کے بعد میڈیا بریفنگ میں کہا ساتویں مردم شماری میں نئی ٹیکنالوجی ‏کا استعمال کیا جائے گا، اور اس کے لیے تمام مراحل 18 ماہ میں مکمل ہوں گے۔

فواد چوہدری نے کہا ساتویں مردم شماری کے منظوری کے مراحل چل رہے ہیں، اگلا الیکشن نئی حلقہ بندیوں اور ‏نئی مردم شماری کے مطابق ہونا ہے، چھ ماہ اور سال میں الیکشن کی پیش گوئیاں کرنے والوں کو مایوسی ہوگی، ‏اپوزیشن میں بونے ہی رہ گئے ہیں، کرسیاں نیچے آ گئی ہیں، ان کی سیاست صرف اپنے پیسے بچانے کے لیے ہو ‏رہی ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ حکومت نے فیصلہ کر لیا ہے کہ اگلے انتخابات نئی مردم شماری اور الیکٹرانک ‏ووٹنگ سے ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں