تازہ ترین

فیض آباد دھرنا : انکوائری کمیشن نے فیض حمید کو کلین چٹ دے دی

پشاور : فیض آباد دھرنا انکوائری کمیشن کی رپورٹ...

حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا

حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں...

سعودی وزیر خارجہ کی قیادت میں اعلیٰ سطح کا وفد پاکستان پہنچ گیا

اسلام آباد: سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان...

حکومت کل سے پٹرول مزید کتنا مہنگا کرنے جارہی ہے؟ عوام کے لئے بڑی خبر

راولپنڈی : پیٹرول کی قیمت میں اضافے کا امکان...

نئے قرض کیلئے مذاکرات، آئی ایم ایف نے پاکستان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

واشنگٹن : آئی ایم ایف کی منیجنگ ڈائریکٹر کرسٹیلینا...

بھارتی حکومت نے 700 سالہ قدیم مسجد کو شہید کردیا

مہرولی: بھارت کے دارالحکومت دہلی میں دہلی ڈیولپمنٹ اتھار  نے منگل کی صبح ایک 700 سال پرانی مسجد کو من مانی طور پر شہید کردیا۔

تاریخی بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر کے بعد اب انتہا پسندوں کی کئی اور تاریخی مساجد اور مزاروں پر نظر ہے، اسی تناظر میں دہلی کے علاقے مہرولی میں قائم 700 سالہ قدیم مسجد کو منہدم کر دیا۔

مقامی لوگوں کے کہنا ہے کہ مسلمانوں سے نفرت اور دشمنی کا مظاہرہ کرتے ہوئے مودی سرکار نے ہائی کورٹ کے انیس سو ستاسی کے حکم کے خلاف ورزی کرتے ہوئے مسجد کو گرا دیا۔

https://twitter.com/HateDetectors/status/1752424809844310245?ref_src=twsrc%5Etfw%7Ctwcamp%5Etweetembed%7Ctwterm%5E1752424809844310245%7Ctwgr%5Eba2f5c2946dc5393ac4cd75f8922d982079a32d5%7Ctwcon%5Es1_&ref_url=https%3A%2F%2Fmaktoobmedia.com%2Findia%2Fdelhi-600-year-old-mosque-razed-by-authorities%2F

مسجد کے امام ذاکر حسین نے بتایا کہ مسجد اخونجی میں مدرسہ بحرالعلوم اور قابل احترام شخصیات کی قبریں تھیں، انہوں نے یہ بھی الزام لگایا کہ عوام کی نظروں سے چھپانے کے لیے ملبہ کو احتیاط سے ہٹایا گیا۔

مسجد کے امام نے مزید دعویٰ کیا کہ اہلکاروں نے انہیں قرآن پاک کے نسخے لے جانے کی اجازت نہیں دی جو مسجد کے اندر رکھی گئی تھیں جبکہ مدرسہ میں زیر تعلیم 22 طلباء کے کپڑے اور کھانے کے سامان کی توڑ پھوڑ بھی کی گئی۔

Comments

- Advertisement -