The news is by your side.

Advertisement

نئی دہلی میں خطرناک فضائی آلودگی ، آکسیجن فروخت ہونے لگی

نئی دہلی : آلودہ شہروں میں سرفہرست بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں فضائی آلودگی میں خطرناک حد تک اضافے کے بعدآکسیجن فروخت ہونے لگی، خالص آکسیجن میں 15 منٹ سانس کی قیمت 300 روپے مقرر کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نئی دہلی دنیا کا آلودہ ترین شہر ہے، سموگ نے سانس لینا دشوار کر دیا، سموگ کے اس راج میں نئی دہلی میں خالص آکسیجن میں 15 منٹ سانس لینے کی پیشکش کی جا رہی ہے، یہ پیشکش اپنی نوعیت کی پہلی آکسیجن بار کی جانب سے کی جارہی ہے۔

آکسی پیور(خالص آکسیجن)کے نام سے کھلنے والی اس بار میں 15 منٹ سانس لینے کے 300 روپے لیے جا رہے ہیں، آکیسجن میں لیونڈر،لیمن گراس اورمنٹ کی خوشبو کی آمیزش کی گئی ہے، پندرہ منٹ تک آکسی پیور بار میں جا کر اپنے منہ پر ماسک پہنیں اور خالص آکسیجن میں سانس لیں۔

آکسی پیور کے مالک 26 سالہ آیاویر کمارنے کہاکہ یہ دہلی میں اپنی نوعیت کی پہلی کمرشل سہولت ہے جس سے فائدہ اٹھاتے ہوئے عام شہری، شہر کی انتہائی آلودہ فضا سے کچھ دیر کے لیے نجات حاصل کر سکتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ روزانہ 30 سے 40 تک گاہک آتے ہیں، گاہکوں کو یہ سہولت بھی فراہم کی جاتی ہے کہ وہ اگر چاہیں تو آکسیجن کے چھوٹے ڈبے اپنے ساتھ لے جائیں تاکہ وہ صاف ہوا میں سانس بھی لے سکیں اور ان کی معمول کی مصروفیات زندگی بھی متاثر نہ ہوں، جیسے جیسے سموگ بڑھتی ہے تو ہمارے ہاں رش بھی بڑھتا جاتا ہے۔

عوام نے آلودگی میں کمی کے لئے موثراقدامات نہ کرنے پرمودی سرکارکوکڑی تنقید کا نشانہ بنایا، ڈاکٹرزکا کہنا ہے کہ نئی دہلی میں سموگ کے باعث دل کی بیماریوں میں دس سے پندرہ فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ حکام نے لوگوں کوغیرضروری طورپرگھروں سے نہ نکلنے کی ہدایت جاری کی ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں