The news is by your side.

Advertisement

کچرے سے بجلی کی پیداوار، مگر کیسے ؟

دنیا بھر میں آنے والے مہنگائی کے سونامی کے ساتھ ٹیکنالوجی کا استعمال بھی بڑھتا جارہا ہے، متاثرہ ممالک کے حکمران اپنے اخراجات کم کرنے کی کوششیں کررہے ہیں۔

اسی خیال کو مدنظر رکھتے ہوئے اب کچرے کا استعمال بہترین طریقے سے کیا جارہا ہے جس پر عمل کرتے ہوئے اس کچرے سے بجلی کی پیداوار کو یقینی بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔

سال 1973 میں ڈنمارک میں تیل پر پابندی کے بعد توانائی کا زبردست بحران پیدا ہوا تھا آج وہی ڈنمارک اپنی بہترین حمکت عملی کے باعث بجلی پیدا کرنے والا بڑا ملک بن چکا ہے یہاں 20فیصد بجلی صرف ہوا کے ذریعے پیدا کی جارہی ہے۔

ڈنمارک کے شہر کوپن ہیگن کے مضافاتی علاقے میں کچرے سے توانائی پیدا کرنے کا سب سے بڑا پروجیکٹ لگایا گیا ہے جہاں یومیہ کی بنیادوں پر ہزاروں ٹن کچرا جلایا جاتا ہے۔

اس کچرے سے جو توانائی پیدا کی جاتی ہے اس سے پورے شہر کی ضروریات پوری کرنے کے علاوہ دیگر مقامات پر بھی فراہم کی جاتی ہے۔

پاکستان اس وقت توانائی اور آبی ذخائر کو محفوظ کرنے کیلئے مسائل سے گزر رہاہے، آبی ذخائر پاکستان کا اہم مسئلہ ہے پانی کو محفوظ کرنے سے متعلق پاکستان کو ڈنمارک ماڈل سے مستفید ہونا چاہئے۔

اس کے علاوہ توانائی کے ساتھ ساتھ آبی بحران سے نمٹنے کیلئے بھی ڈنمارک ٹیکنالوجی سے پاکستان مستفید ہوسکتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں