بھارتی ایجنٹ کی گرفتاری بہت بڑی کامیابی ہے، عاصم سلیم باجوہ -
The news is by your side.

Advertisement

بھارتی ایجنٹ کی گرفتاری بہت بڑی کامیابی ہے، عاصم سلیم باجوہ

اسلام آباد : ڈی جی آئی ایس پی آرلیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ بھارتی ایجنٹ کلبھوشن لیفٹیننٹ کرنل رینک کا افسر ہے، آج تک ایسا نہیں ہوا ہے کہ کوئی انٹیلی جنس افسر پکڑ اگیاہو۔

یہ بات انہوں نےوزیراطلاعات کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی، عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ بھارتی ایجنٹ کی گرفتاری بہت بڑی کامیابی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ کل بھوشن یادیو نے تفتیش کے دوران انکشاف کیا ہے کہ ”را“سی پیک منصوبے کو تباہ کرنے کے لیے گوادرپورٹ کو نشانہ بنا نا چاہتی تھی ۔اس حوالے سے کل بھوشن یادیو کو 30سے 40بھارتی ”را“کے ایجنٹ پاکستان میں داخل کرانے کا ٹاسک ملا تھا ۔

عاصم باجوہ نے کہا کہ یہ اسٹیٹ سپورٹیڈ ٹیرر ازم ہے کیو نکہ کسی ملک کے اتنے بڑے خفیہ افسر کو کسی دوسرے ملک سے پکڑنے کی مثال دنیا کی تاریخ میں بہت ہی کم ملتی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ کلبھوشن یادیو نےپہلے کشتیوں کاکاروبارشروع کیا، کلبھوشن اسکریپ کےکاروبارکی آڑ میں پاکستان آیا، بھارتی ایجنٹ کےپاس پاکستانی،ایرانی،امریکی کرنسی تھی، بھارتی ایجنٹ کی ذمہ داری رابطےاوراسلحہ دینا تھا۔

مہران بیس حملےکی فنڈنگ بھی بھارتی ایجنٹ کےعلم میں ہے، عاصم باجوہ نے کہا کہ بھارتی ایجنٹ سےپاکستانی قانون کےمطابق نمٹاجائیگا۔

ایرانی ایجنسیوں سےمعلومات کا تبادلہ ہوتا ہے، انہو ں نے بتا یا کہ کل بھوشن اپنے مشن کے لئے دائرہ اسلام میں داخل ہوا ،اس کے علاوہ کل بھوشن یادیو چا ہ بہار ایران میں جیولری کا ڈیلر تھا ۔

کلبھوشن یادیو اعترافی وڈیو بیان


Confessional Video of In-Service Indian RAW… by arynews

عاصم سلیم باجوہ نے بتایا کہ را کا افسر کلبھوشن یادیو، حسین مبارک پٹیل کے نام سے کام کر رہا تھا ۔1991میں بھارتی نیوی اور 2001میں انٹیلیجنس سروس جوائن کی بھارتی نیوی کا حاضر سروس افسر ہے،2022میں ریٹائرہوگا ۔

2013میں را میں شامل کیا گیا،ایران کے شہرچاہ بہارمیں تعینات تھا را کے جوائنٹ سیکریٹری انیل کمار گپتا کے ماتحت تھا بھارتی مشیرقومی سلامتی سے بھی ہدایات ملتی تھیں کراچی اور بلوچستان میں کارروائیوں کا ہدف دیا گیا تھا۔

ایران کے سراوان بارڈر سے پاکستان میں داخل ہوا پاکستان آمد کا مقصد بی ایل اے کے لوگوں سے ملنا تھا بلوچ باغیوں سے رابطہ رکھا۔

فنڈنگ بھی کی بلوچستان میں تنصیبات کو نقصان پہنچانا ہدف میں شامل تھا گرفتاری کے وقت بلوچ باغیوں سے میٹنگ کے لئے آرہا تھا۔

آپ کا بندر ہمارے ساتھ ہے

پریس کانفرنس کے دوران ڈی جی آئی ایس پی آر نے بھارتی ایجنسی کا کوڈ ورڈ بھی بتادیا، ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ بھارتی جاسوس نے کہا ہے کہ اگر آپ بھارتی حکومت کو بتانا چاہتے ہیں کہ ان کا جاسوس آپ کے پاس ہے تو ان کو یہ کوڈ ورڈ بتائیں۔ جو ہے ’’یوور منکی ودھ اس‘‘
YOUR MONKEY IS WITH US

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں