The news is by your side.

Advertisement

اصلی اور نقلی پرفیوم کا پتہ لگانا بہت آسان

مسحور کن خوشبو کی پرفیوم لگانا ہر کسی کو پسند ہوتا ہے، ایک اچھا اور مہنگا پرفیوم ہی بہترین خوشبو رکھتا ہے جو دیر تک قائم رہتی ہے لیکن بعض لوگ اس چکر میں جعلی پرفیوم بھی خرید لیتے ہیں۔

تاہم مختلف طریقوں کے ذریعے آپ اپنے پرفیوم کے اصلی یا نقلی ہونے کا پتہ لگا سکتے ہیں۔

پرفیوم کا رنگ

یاد رکھیں کہ اصلی پرفیوم کا رنگ مدھم ہو گا نہ کہ تیز یا بھڑکیلا جبکہ نقلی پرفیوم میں کئی قسم کے اجزا شامل ہوتے ہیں جس کی وجہ سے پرفیوم کا رنگ تیز اور گہرا نظر آتا ہے۔

پرفیوم کی بوتل کی فنشنگ

نقلی پرفیوم والی بوتل کبھی بھی ہموار اور فنشنگ والی نہیں ہوگی، اس کی فنشنگ ناہموار ہوگی اور پرفیوم کی چمک مدہم دکھائی دے گی جبکہ بوتل کے پیندہ کی شکل بھی عجیب ہوگی۔

اصلی پرفیوم کی بوتل ڈیزائن کے حوالے سے ہموار اور سموتھ ہوتی ہے جس کے نوزل کا سائز بھی زیادہ بڑا نہیں ہوگا۔

پرفیوم کی بوتل کا سیریل نمبر

صارف پرفیوم خرید کر اس کا ڈبہ کھولنے سے پہلے بوتل اور ڈبے کے سیریل نمبر کا موازنہ نہیں کر سکتا مگر کسی بھی پرفیوم کو خریدنے سے پہلے یہ یقین کر لیں کہ اس کے ڈبے پر موجود سیریل نمبر بوتل پر موجود سیریل نمبر سے مماثلت رکھتا ہے۔

اگر سیریل نمبر میں یکسانیت نہیں ہوگی تو فوراً سمجھ جائیں کہ پرفیوم جعلی ہے۔

پرفیوم کے ڈبے کی ریپنگ

ڈبے پر موجود پلاسٹک ریپنگ بھی اس پرفیوم کے اصلی یا نقلی ہونے کا اندازہ لگانے میں بڑی حد تک معاون ہو سکتی ہے۔

ڈبے پر موجود پلاسٹک ریپنگ چیک کریں کیونکہ اگر ریپر کی فولڈنگ ناہموار یا 5 ملی میٹر سے چوڑی ہیں تو آپ کا پرفیوم نقلی اور جعلی ہے۔

اصلی اور برانڈڈ پرفیوم کے ڈبے میں اندرونی پیپر صاف اور سفید رنگ کا ہوتا ہے، جبکہ ڈبے میں ایک گتہ بھی موجود ہوتا ہے جو بوتل کو ٹوٹنے سے بچانے کے لیے رکھا گیا ہوتا ہے۔

پرفیوم کی بوتل کا ڈھکن

پرفیوم کی بوتل کا ڈھکن، بوتل پر موجود لوگو متوازن اور بوتل یا ڈھکن کے مرکز میں چسپاں ہونا چاہیئے کیونکہ اگر یہ لوگو بوتل پر لگے ڈھکن کی سیدھ کے مرکز میں نہ ہوا تو پرفیوم کی کوالٹی کے بارے میں سوال پیدا ہوگا۔

پرفیوم کی خریداری سے قبل کمپنی کی ویب سائٹ وزٹ کریں

ویب سائٹ وزٹ کرنے سے ایک تو پرفیوم کی اصل قیمت کا پتہ چل جاتا ہے اور دوسرا اس سے پرفیوم کے رنگ اور کمپنی کی پیکنگ وغیرہ کے بارے میں بھی پتہ چل جاتا ہے جبکہ پرفیوم کے اجزا سے بھی واقفیت ہو جاتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں