نوجوان کی ہلاکت، لاہور میں پتنگیں اڑانے، بیچنے اور بنانے والوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کا حکم
The news is by your side.

Advertisement

نوجوان کی ہلاکت، لاہور میں پتنگیں اڑانے، بیچنے اور بنانے والوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کا حکم

لاہور : ڈی آئی جی آپریشنز لاہور نے شہر میں پتنگیں اڑانے، بیچنے اور بنانے والوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کا حکم دے دیا اور کہا پتنگ بازی جیسے خطرناک کھیل نے کئی گھروں کے چراغ گل کئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق ڈی آئی جی آپریشنز لاہور شہزاد اکبر نے تمام ڈویژنل ایس پیز کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے علاقہ جات میں پتنگ بازی اور پتنگ سازی پر پابندی کو ہر قیمت پر یقینی بنائیں۔

ڈی آئی جی کا کہنا ہے کہ لاہور پولیس نے اگست اور رواں ماہ کے دوران پتنگ بازی کی خلاف ورزی پر 300 مقدمات میں 316 ملزمان گرفتار کئے ہیں، پتنگ ساز فیکٹریوں کے خلاف کارروائی کے حوالہ سے ضلعی انتظامیہ سے مکمل کوارڈینشن اور تعاون جاری رہے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ پتنگ بازی جیسے خطرناک کھیل نے کئی گھروں کے چراغ گل کئے ہیں۔ والدین اپنے بچوں کیلئے دکانداروں سے پتنگوں کی بجائے موت خرید رہے ہیں، والدین کو اپنے بچوں کی پتنگ بازی کے حوالہ سے حوصلہ شکنی کیلئے مؤثر کردار ادا کرنا ہوگا۔

شہزاد اکبر نے مزید کہا آئندہ پتنگ بازی کرنے والوں کے والدین کے خلاف بھی قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

یاد رہے گذشتہ روز لاہور کے علاقے شاہدرہ میں گردن پر ڈور پھرنے سے موٹرسائیکل سوار نوجوان بلال جاں بحق ہوگیا تھا۔

مزید پڑھیں : پتنگ بازی پرپابندی کےقانون پرعمل نہ کرانا افسوس ناک ہے‘ عثمان بزدار

وزیراعلیٰ پنجاب نے بھاٹی گیٹ میں ڈور پھرنے سے نوجوان کے جاں بحق ہونے پراظہارافسوس اور لواحقین سے تعزیت کی اور واقعے کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے ڈی آئی جی آپریشنزسے رپورٹ طلب کرلی۔

وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھا کہ پتنگ بازی پرپابندی کے قانون پرعمل نہ کرانا افسوس ناک ہے، غفلت کے ذمے داروں کا تعین کرکے کارروائی کی جائے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پتنگ بازی پرپابندی کے قانون پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے، خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں