The news is by your side.

Advertisement

متنازع اتھارٹی نے جزائر پر کام شروع کر دیا

کراچی: سندھ اور بلوچستان اسمبلیوں کی جزائر سے متعلق قراردادیں بے سود ہو گئیں، متنازعہ اتھارٹی نے جزائر پر کام شروع کر دیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاق کی جانب سے سندھ کے جزائر سے متعلق انتظامی فیصلوں میں پیش رفت جاری ہے، اس سلسلے میں سندھ اور بلوچستان اسمبلی میں پاس ہونے والی قراردادیں بے کار چلی گئیں۔

متنازع پاکستان آئی لینڈ اتھارٹی نے بڈو اور بنڈل جزائر پر کام شروع کر دیا، جزائر پر ماحولیاتی اثرات سے متعلق رپورٹ کی تیاری کے لیے ٹینڈر میں توسیع کر دی گئی ہے۔

پاکستان آئی لینڈ اتھارٹی نے ماحولیاتی تجزیے کے لیے اظہار دل چسپی میں 10 نومبر تک توسیع کی ہے، خیال رہے کہ سندھ اسمبلی نے صدارتی آرڈیننس غیر قانونی قرار دے کر قرارداد منظور کی تھی۔

پوری طاقت سے جزائر آرڈیننس منسوخ کرائیں گے، وزیراعلیٰ سندھ

گزشتہ ہفتے سندھ اسمبلی میں وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے جزائر سے متعلق وفاقی حکومت کے اقدام کو سندھ کی سالمیت پر حملہ قرار دیا تھا، اسمبلی میں قرارداد بھی پاس کی گئی، انھوں نے کہا ہم جزائر پر آرڈیننس پوری طاقت سے منسوخ کروائیں گے۔

وزیر اعلیٰ نے وفاق کے جزائر سے متعلق آرڈیننس کو غیر قانونی قرار دیا، یہ آرڈیننس 29 اگست کو صدر نے منظور کیا تھا، وزیر اعلیٰ نے کہا آئین کے مطابق جزیرے صوبے کی ملکیت ہیں، اس سلسلے میں وفاقی حکومت کو لکھ بھی دیا گیا ہے کہ یہ جزائر آپ کی ملکیت نہیں ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں