The news is by your side.

Advertisement

سعودی حکام کی گھریلو ملازمین کے اقامے کے حوالے سے وضاحت

ریاض: سعودی حکام نے مملکت میں گھریلو ملازمین کے اقامے کی تجدید اور خروج و عودہ کے حوالے سے وضاحت جاری کی ہے۔

سعودی عرب میں غیر ملکی ملازمین کو 2 زمروں میں تقسیم کیا جاتا ہے جن میں گھریلو ملازمین اور کمرشل کیٹگری شامل ہے، گھریلو ملازمین میں ڈرائیور، خادمہ، چوکیدار، باورچی، فیملی ٹیچر وغیرہ شامل ہیں، جبکہ تجارتی شعبے کے ملازمین دوسری کیٹگری میں شامل ہیں۔

دونوں شعبوں کے ملازمین میں بنیادی فرق فیسوں کا ہوتا ہے، کمرشل کارکنوں کی تعیناتی کا طریقہ کار گھریلو کارکنوں سے مختلف ہوتا ہے، جبکہ ان کے اقامہ کی فیسوں میں بھی فرق ہوتا ہے۔

جوازات کے ٹویٹر پر ایک شخص نے دریافت کیا کہ سائق خاص کا اقامہ تجدید کرنے کا طریقہ کار کیا ہے؟

جوازات کا کہنا تھا کہ سائق خاص کے اقامے کی تجدید کے لیے کارکن کے کفیل کو چاہیئے کہ وہ اپنے ابشر اکاؤنٹ کے ذریعے اقامہ تجدید کی کارروائی کرے۔

ابشر اکاؤنٹ سے اقامہ کی تجدید کی کمانڈ دینے سے قبل کارکن کے اقامہ کی فیس ادا کرنا ضروری ہے جو بینک کے ذریعے ادا کی جائے گی، فیس ادا کرنے سے قبل اقامہ تجدید نہیں کیا جا سکتا۔

سائق خاص یعنی فیملی ڈرائیور یا اس زمرے میں شامل کارکنوں کے اقامہ کی سالانہ فیس 500 ریال ہوتی ہے، جبکہ ان پر وزارت افرادی قوت کی مد میں سعودائزیشن کی فیس عائد نہیں ہوتی۔

اس لیے ان کے اقاموں کی تجدید براہ راست جوازات سے کی جاتی ہے، جبکہ تجارتی کارکنوں کے اقاموں کی تجدید کے لیے وزارت افرادی قوت و سماجی بہبود آبادی، جس کا سابقہ نام وزارت محنت ہوا کرتا تھا، کی فیس ادا کرنے کے بعد ہی اقاموں کی تجدید جوازات سے کروائی جاتی ہے۔

جوازات سے گھریلو ملازم کے حوالے سے ایک اور شخص نے دریافت کیا کہ گھریلو ملازم جو چھٹی پر وطن گیا ہو اس کے خروج و عودہ میں توسیع کی جا سکتی ہے؟

وزارت کا کہنا تھا کہ مملکت سے باہر گئے ہوئے غیر ملکی کارکنوں کے اقاموں اور خروج و عودہ کی مدت میں توسیع کروانا ممکن ہے، اس کے لیے کارکن کے اسپانسر کو چاہیئے کہ وہ مطلوبہ مدت کی فیس جمع کروانے کے بعد خروج وعودہ کی مدت میں توسیع کرنے کے لیے اپنے ابشر اکاؤنٹ کو استعمال کرے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں