The news is by your side.

Advertisement

کشمیر پر ثالثی کے بیان پر بھارتی واویلا، وائٹ ہاؤس کے اکنامک ایڈوائزر کا دوٹوک اعلان

امریکی صدرکوئی بات بلاوجہ نہیں کرتے

واشنگٹن : امریکی صدر ٹرمپ کے کشمیر پر مودی کی ثالثی کی درخواست کے بیان پربھارتی واویلے پر وائٹ ہاؤس کے اکنامک ایڈوائزر نے دوٹوک اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدرکوئی بات بلاوجہ نہیں کرتے۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدرڈونلڈٹرمپ کے بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کی جانب سے مسئلہ کشمیر پر ثالثی کی درخواست کے بیان نے بھارت میں کہرام مچا دیا۔

وائٹ ہاؤس کے مشیربرائے معیشت لیری کڈلو نے ثالثی کی درخواست سے متعلق پوچھے گئے سوال پر دوٹوک الفاظ میں کہا کہ امریکی صدرکوئی بات بلاوجہ نہیں کرتے جبکہ لیری کڈلونے صحافی کے سوال کوبھی نامناسب قراردیا۔

یاد رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے دوران بھارتی وزیراعظم نریندرمودی کی طرف سے مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے ثالثی کی بات کرنے کا اظہار کیا تو سارا بھارت آگ بگولہ ہوگیا تھا۔

مزید پڑھیں : مسئلہ کشمیر پر ٹرمپ کی ثالثی کا بیان، لوک سبھا میں مودی پر شدید لعن طعن

وائٹ ہاوس میں وزیر اعظم عمران خان کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈونلڈ ٹرمپ نے انکشاف کیا تھا کہ بھارتی وزیر اعظم مودی نے کہا کیا آپ ثالث بنیں گے، میں نے پوچھا کس چیز کی ثالثی؟ تو بھارتی وزیر اعظم نے کہا کشمیر پر ثالثی کا کردار ادا کریں۔

امریکی صدر کے اس بیان کے بعد بھارتی وزارت خارجہ سے لے کروزیردفاع تک سب وضاحتیں پیش کررہے ہیں۔

بھارتی وزیر خارجہ جے سنکر نے راجیہ سبھا میں امریکی صدر کے بیان اور ثالث بننے کی پیشکش کو مسترد کردیا لیکن اپوزیشن جماعتوں نے وزیراعظم نریندر مودی کی طرف سے وضاحتی بیان کا مطالبہ کردیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں