The news is by your side.

Advertisement

کانگو: کشتی کو بڑا حادثہ، سیکڑوں افراد لا پتا، متعدد ہلاک

کنشاسا: وسطی افریقی ملک کانگو میں ایک کشتی ڈوبنے سے 60 افراد ہلاک جب کہ سیکڑوں لا پتا ہو گئے۔

تفصیلات کے مطابق کانگو کے مائی دومبے صوبے میں ایک مسافر بردار کشتی ڈوبنے سے سیکڑوں افراد لا پتا ہو گئے، جب کہ ساٹھ افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی گئی ہے۔

یہ افسوس ناک حادثہ کانگو کے مائی دومبے صوبے کے گاؤں لونگولا ایکوٹی میں اتوار کی رات کو پیش آیا، سرکاری حکام کا کہنا ہے کہ دریائے کانگو میں کشتی تقریباً 700 مسافروں کو لے کر جا رہی تھی کہ الٹ گئی۔

وزیر برائے ہیومنیٹیرین ایکشن اسٹیو ایمبکائی نے میڈیا کو بتایا کہ ڈوبنے والی کشتی کے 300 مسافروں کی جان بچ گئی ہے جب کہ دیگر افراد کے بارے میں حتمی معلومات حاصل نہیں ہو سکی ہیں، نیز ریسکیو ٹیم نے ساٹھ افراد کی لاشیں نکال لی ہیں۔

رپورٹس کے مطابق یہ جہاز دارالحکومت کنشاسا سے روانہ ہوا تھا اور صوبہ استوا کی طرف جا رہا تھا۔ حکام کا کہنا تھا کہ کشتی کے غرق ہونے کی بنیادی وجہ گنجائش سے زیادہ مسافروں کو سوار کرنا اور بہت زیادہ سامان لادنا ہے، اس بار نیویگیشن نے بھی جہاز کی تباہی میں کردار ادا کیا ہے۔

واضح رہے کہ معدنیات سے بھرپور اس ملک میں کشتیوں کے حادثے معمول بن چکے ہیں، کیوں کہ کشتیاں مسافروں اور سامان سے ان کی گنجائش سے زیادہ اوور لوڈ کر دی جاتی ہیں، اور کشتیوں میں سفر کرنے والے اکثر مسافر لائف جیکٹس بھی نہیں پہنتے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ کیو جھیل میں بھی ایک مسافر کشتی ڈوبنے سے 3 لوگ ہلاک ہوئے تھے، جن میں دو بچے اور ایک خاتون شامل تھیں، گزشتہ برس مئی میں کیو جھیل میں ایک تفریحی کشتی ڈوبنے سے ایک آٹھ سالہ بچی سمیت 10 افراد کی موت ہوگئی تھی۔ جب کہ جولائی 2010 میں مغربی صوبہ بینڈنڈو میں کشتی الٹنے سے 135 سے زیادہ افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں