The news is by your side.

Advertisement

یوکرین کے درجنوں فوجیوں نے ہتھیار ڈال دئیے

روس کے خلاف لڑنے والے 73 یوکرینی فوجیوں نے ڈی پی آر کے سامنے رضاکارانہ طور پر ہتھیار ڈال دئیے۔

یوکرین پر روسی حملے کو آج ساتواں روز ہے، جنگ جتنی زمین پر لڑی جارہی ہے اتنی میڈیا پر بھی جاری ہے اور دونوں جانب سے ایک دوسرے زیادہ سے زیادہ نقصان پہنچانے کی خبریں سوشل میڈیا اور عالمی میڈیا کی زینت بن رہی ہیں۔

روسی خبر رساں ادارے کے مطابق ڈونیٹسک پیپلز ریپبلک کی پیپلز ملیشیا کے ڈپٹی ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ ایڈورڈ باسورین تصدیق کی ہے کہ یوکرین کے 73 فوجیوں نے رضاکارانہ طور پر ہتھیار ڈال دئیے ہیں۔

دوسری جانب یوکرین نے شہر خیرسن پر روسی قبضے کی بھی تصدیق کی ہے، جو روس سے الحاق شدہ کریمیا سے نزدیک ہے۔

رپورٹ کے مطابق دو لاکھ نوے ہزار آبادہ والا یہ شہر خیرسن پہلا بڑا شہر جس پر روس نے مکمل پر قبضہ کرلیا ہے جب کہ ماریوپول اور کیف پر شدید حملوں کا سلسلہ جاری ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں