The news is by your side.

Advertisement

ہوٹل آتشزدگی: میرا دم گھٹ رہا ہے، جاں‌ بحق ڈاکٹر رحیم کا اے آروائی کو آخری فون

کراچی: شہر قائد میں واقع مقامی ہوٹل میں لگنے والے آتشزدگی کے دوران ایک شخص ڈاکٹر رحیم نے اپنی زندگی کا آخری فون اے آر وائی کو کیا اور فوری مدد کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ بچنے کی امید کم ہے، تمام کمروں میں دھواں بھر گیا ہے جلدی مدد کی جائے۔

اے آر وائی نیوز کے رپورٹر ارباب چاناڈیو کے مطابق انہوں نے رات تین بج کر 21 منٹ پر ہوٹل میں آگ لگنے کی اطلاع مجھے دی اور مدد کی درخواست کی اسی وقت اے آر وائی نیوز کی ٹیم ہوٹل پہنچی اور امدادی اداروں کو آگ لگنے کی اطلاع دی، ٹیم نے ڈاکٹر رحیم کو فون کیا تو انہوں نے کہا کہ آگ شدت اختیار کرگئی ہے اور دھواں بھرنے کی وجہ سے ان کا دم گھٹ رہا ہے، مہربانی کرکے کسی کو بلائیں ورنہ ہمارے بچنے کی امید بہت کم ہے۔


ہوٹل آتشزدگی واقعہ: جاں بحق افراد کی تعداد 13 ہوگئی


رپورٹر کے مطابق امدادی اداروں کو پھر کہا گیا کہ وہ فوری پہنچیں اور ڈاکٹر رحیم کو پھر فون کیا گیا تو انہوں نے فون ریسیو نہیں کیا اس کے بعد اطلاع ملی کہ دھویں سے دم گھٹنے کے سبب ڈاکٹر رحیم انتقال کرگئے۔

رپورٹر نے مزید بتایا کہ ان کی آخری بات چیت اے آر وائی نیوز سے ہوئی جس میں ڈاکٹر رحیم کا کہنا تھا کہہر طرف دھواں بھر گیا ہے اور دھویں کے سبب ان کا دم گھٹ رہا ہے۔

واضح رہے کہ ڈاکٹر رحیم سولنگی سندھ ترقی پسند پارٹی کے سیکریٹری جنرل بھی رہے ہیں تاہم وہ سیاست سے کنارہ کشی اختیار کرچکے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں