The news is by your side.

’آپ ایسے بول رہی ہیں جیسے کبھی کسی سے پیسے نہیں لیے‘

اے آر وائی ڈیجیٹل کے ڈرامہ سیریل ’حبس‘ کی 12ویں قسط کا سین مداحوں کو بھا گیا۔

ڈرامہ سیریل ’حبس‘ میں فیروز خان (باسط)، اشنا شاہ (عائشہ)، عائشہ عمر (روہا)، اسرا غزل (سعدیہ باسط کی والدہ)، جاوید شیخ، عمران اسلم، صبا فیصل (عائشہ کی والدہ)، حنا رضوی، دانیہ انور(بانو) ودیگر مرکزی کردار نبھا رہے ہیں۔

گزشتہ قسط میں دکھایا گیا کہ ’عائشہ سے شادی کے دوران دیے گئے سلامی کے لفافے عائشہ کی والدہ کے پاس ہوتے ہیں جس میں باسط کے کوئی اہم کاغذات بھی چلے جاتے ہیں وہ اسے لینے کے لیے سسرال پہنچتے ہیں۔‘

باسط کہتے ہیں کہ ’عائشہ سے آپ نے اسٹٰیج پر آپ نے کچھ لفافے لیے تھے جس میں میرا ایک اہم لیٹر ہے وہ مجھے دے دیں اور پیسے والے لفافے بے شک آپ رکھ لیں۔‘

عائشہ کی والدہ ہڑبڑاتے ہوئے کہتی ہیں کہ ’بیٹا میں نے وہ لفافے لیے نہیں تھی دراصل وہ عائشہ سے سنبھل نہیں لے رہے تھے میں نے پکڑ کر رکھ لیے تھے وہ تو تمہاری سلامی کے لفافے ہیں میں تمہیں واپس کردیتی۔‘

’اتنی دیر میں بانو سارے لفافے لا کر باسط کو دے دیتی ہیں اور وہ لیٹر لے کر کہتے ہیں کہ بس یہ لیٹر تھا آپ پیسے رکھ لیں آپ کو ان پیسوں کی ضرورت ہوگی۔‘

وہ کہتی ہیں ’بیٹا یہ تو تمہارے دوستوں نے سلامی دی تھی میں انہیں کیسے رکھ سکتی ہوں۔‘

باسط طنز کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ ’آپ کو ایسے بول رہی ہیں کہ جیسے کبھی آپ نے کسی سے پیسے نہیں لیے ہیں۔‘
یاد رہے کہ عائشہ سے شادی کرنے کے عوض ان کی والدہ باسط سے 75 لاکھ روپے لیتی ہیں۔‘

ڈرامے میں مزید کیا ہونے جارہا ہے یہ جاننے کے لیے ’حبس‘ کی اگلی قسط دیکھنا نہ بھولیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں