The news is by your side.

Advertisement

سعودی ایئر پورٹ پر ڈرون حملے، پاکستان کا ردِ عمل

اسلام آباد: پاکستان نے سعودی عرب میں جازان ایئر پورٹ پر حوثی باغیوں کے ڈرون حملوں کی مذمت کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق حوثی باغیوں نے جازان شاہ عبداللہ ایئر پورٹ کو ڈرون حملوں سے نشانہ بنایا ہے، جس میں 6 سعودی شہری، 3 بنگلا دیشی اور ایک سوڈانی شہری زخمی ہوئے۔

پاکستان نے ان حملوں پر ردِ عمل میں کہا ہے کہ ایسے حملے سعودی عرب اور خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں، اور پاکستان ایسی کارروائیوں کی فوری بندش کا مطالبہ کرتا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے بیان میں کہا پاکستان عسکریت پسندوں کے حملوں کی پُر زور مذمت کرتا ہے، حملوں سے ایئر پورٹ کو نقصان پہنچا اور متعدد افراد زخمی ہوئے، ہم زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا گو ہیں۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا سعودی عرب اور خطے کی سلامتی کے لیے خطرہ بننے والی کارروائیاں فوری طور پر بند ہونی چاہیئں، پاکستان ایسے خطرات کے خلاف سعودی عرب کے ساتھ کھڑا ہے۔

واضح رہے کہ یمن کی سرحد کے قریب سعودی عرب کے شہر جازان کے ہوائی اڈے پر حملوں میں کم از کم 10 افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے، سعودی پریس ایجنسی (ایس پی اے) نے بتایا کہ جمعہ کی شام شاہ عبداللہ ایئر پورٹ کو نشانہ بنایا گیا۔

سعودی قیادت والے اتحاد کے ترجمان کا حوالہ دیتے ہوئے ایس پی اے نے کہا کہ پہلا پروجیکٹائل ایک ڈرون سے داغا گیا، جس سے ایئر پورٹ کے سامنے کی کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور متعدد افراد زخمی ہوئے۔

خبر میں مزید بتایا گیا کہ دھماکا خیز مواد سے بھرا دوسرا ڈرون میزائل ہفتے کے روز روکا گیا۔ روئٹرز کے مطابق دس زخمیوں میں پانچ افراد کو معمولی زخم آئے ہیں، جب کہ دیگر پانچ زخمیوں کی حالت کے بارے میں کچھ معلوم نہیں ہو سکا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں