دبئی حکومت کی غیر قانونی تارکین کے لیے ایمنسٹی اسکیم
The news is by your side.

Advertisement

دبئی حکومت کی غیر قانونی تارکین کے لیے ’ویزہ ایمنسٹی اسکیم‘ جاری

دبئی: متحدہ عرب امارات کی حکومت نے اپنے ملک میں مقیم غیر قانونی تارکین وطن کے لیے ایمنسٹی اسکیم متعارف کرادی ، جس کے باعث ایشیائی باشندے پر عائد 10 لاکھ درہم کا جرمانہ بھی معاف کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق یواےای میں غیرقانونی تارکین اور رہائشی افراد کو ریلیف دینے کے لیے حکومت نےایمنسٹی اسکیم متعارف کروائی جس کے تحت شہری اپنا رہائشی اسٹیس تبدیل کرواسکتے اور ویزے کی معیاد ختم ہونے کے باوجود درخواست دے کر قانونی طور پر سکونت اختیار کرسکتے ہیں۔

حکومت نے یہ اسکیم تین ماہ کے لیے متعارف کرائی جس سے اب تک سینکڑوں غیر قانونی تارکین نے فائدہ اٹھایا، دبئی چھوڑنے کے خواہش مندوں یا قیام کو قانونی بنانے کے خواہش مند مخصوص مراکز پہنچے۔

یو اے ای سربراہ کی جانب سے اداروں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ مخصوص مراکز آنے والے افراد سے خوش اخلاقی سے پیش آئیں، اسی بات کو مدنظر رکھتے ہوئے ڈیوٹی پر مامور ملازمین نے مراکزی آنے والے افراد کے 10 منٹ سے بھی کم وقت میں معاملات حل کیے۔

حکومت کی جانب سے متعارف کرانی جانے والی اسکیم سے فائدہ اٹھانے کے لیے پہلے روز غیر قانونی طور پر رہائش پذیر پندرہ سو تینتالیس (1543) افراد نے درخواستیں جمع کروائیں جن میں سے اکثر کی خواہش دبئی میں ہی مزید قیام کرنا تھا جبکہ کچھ نے اپنے اپنے وطن واپس جانے کی اجازت بھی مانگی۔

شہریوں کا ڈیٹا اکھٹا کرنے والے ادارے محکمہ اقامہ نے ایشیائی تارک وطن پر حکومت کی جانب سے عائد ہونے والا 10 لاکھ درہم کا جرمانہ معاف کیا اور اُسے واپس اپنے وطن جانے کی اجازت دی۔

ایمنسٹی اسکیم سے فائدہ اٹھانے کے لیے دبئی حکومت نے اپنے ملک میں قائم تمام سفارت خانوں کے نمائندگان سے اپیل کی ہے کہ وہ اپنے اپنے شہریوں کو وطن واپس جانے یا پھر متحدہ عرب امارات میں قیام کو قانونی بنانے کی ترغیب دیں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کے مسائل حل ہوں۔

عرب میڈیا کے مطابق غیر قانونی تارکین دبئی میں قیام کو قانونی بنانے کی استدعا کریں گے انہیں مستقبل میں حکومت کی جانب سے عائد کیا جانے والا ٹیکس باقاعدگی سے ادا کرنا ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں