The news is by your side.

Advertisement

فقیروں کا نیا انداز، واٹس ایپ پر بھیک مانگنے لگے

دبئی کی پولیس نے واٹس ایپ کے ذریعے بھیک مانگنے والے فقیر کو گرفتار کرتے ہوئے شہریوں سے اپیل کی کہ وہ ایسے پیشہ ور بھکاریوں کی کسی صورت مدد نہ کریں۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق دبئی پولیس نے عرب شہریت رکھنے والے ایک ایسے فقیر کو گرفتار کیا، جو مختلف نمبروں پر واٹس ایپ پیغامات بھیج کر بھیک مانگتا تھا۔

پولیس کے مطابق سائبر فقیر نے واٹس ایپ پر اپنا اکاؤنٹ بنایا ہوا تھا اور وہ شہریوں سے میسج کر کے بھیک مانگتا تھا۔

ایک شہری نے پولیس کو واٹس ایپ پر آنے والے پیغام سے متعلق بتایا، جس کے بعد اہلکاروں نے فقیر کو تلاش کر کے اسے گرفتار کیا، جس نے تفتیش کے دوران جدید طریقے سے بھیک مانگنے کا اعتراف بھی کیا۔

پولیس کے اعلیٰ افسران نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ ایسے نوسرباز پیشہ ور فقیروں کے پیغامات کو نظر انداز کریں اور مستحق افراد کی ہی مدد کریں۔

ملزم نے بتایا کہ وہ مختلف واٹس ایپ نمبرز پر پیغامات بھیجنے کے علاوہ اسٹیٹس پر بھی پیسوں کی درخواست کرتا تھا، علاوہ ازیں وہ انسٹاگرام پر بھی متحرک تھا۔ اُس نے بتایا کہ ’رمضان کے مقدس مہینے میں کام زیادہ ہونے کی وجہ سے اُس نے ٹیکنالوجی کا استعمال کیا‘۔

متحدہ عرب امارات پبلک پراسیکیوشن نے منگل کے روز شہریوں کے نام ایک اعلامیہ جاری کیا، جس میں انہیں خبردار کیا گیا کہ وہ کسی بھی پیشہ ور فقیر کو عطیات و صدقات نہ دیں۔ اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ ایسے پیشہ ور فقیروں کو قانون کی خلاف ورزی کرنے پر ایک لاکھ درہم جرمانہ اور قید کی سزا دی جاسکتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں