The news is by your side.

Advertisement

دبئی: ریسٹورنٹ مالک نے ٹرینی لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

دبئی: متحدہ عرب امارات کے شہر دبئی میں افغانستان سے تعلق رکھنے والے ریسٹورنٹ کے مالک نے ٹرینی لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے کے مطابق دبئی میں افغانستان سے تعلق رکھنے والے 47 سالہ ریسٹورنٹ مالک نے الجیریا کی لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

پبلک پراسیکیوٹر کے مطابق واقعہ 22 مئی کو المرکبات پولیس اسٹیشن کی حدود میں پیش آٰیا۔

رپورٹ کے مطابق زیادتی کا شکار لڑکی الریقا میں واقعہ ریسٹورنمٹ میں نوکری کے لیے درخواست دینے گئی تھی، رات کے 10 بجے ریسٹورنٹ کے مالک نے مجھے اپنے دفتر میں بلایا اور زیادتی کا نشانہ بنایا۔

متاثرہ لڑکی کا کہنا ہے کہ مجھے ریسٹورنٹ کے مالک نے اپنے کیبن میں بلا کر درخواست لاک کردیا اور نازیبا حرکات کرنے لگا۔

متاثرہ لڑکی کا کہنا ہے تھا کہ میں نے ان سے درخواست کی کہ دروازہ کھولے اور مجھے جانے دیں مگر انہوں نے میری ایک نہ سنی اور دھمکی دی کہ اگر تم نے اس عمل میں میرا ساتھ نہ دیا تو قتل کردوں گا۔

مزید پڑھیں: دبئی میں ایک شخص نے خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

لڑکی کا عدالت میں کہنا تھا کہ اس نے مجھے زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد شادی کی آفر بھی کی اور کچھ پیسے دینے کا کہا، میں نہیں جانتی کتنے پیسے تھے، پر اس نے مجھے پولیس کو اطلاع دینے سے منع کیا۔

متاثرہ لڑکی نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ میں آفس سے باہر نکلی تو میرے ہاتھ میں پیسے تھے اور اس نے باقی کی رقم بعد میں دینے کا کہا۔

بعدازاں آفس کے ایک ملازم کی مدد سے میں نے پولیس کو سارے واقعے کی اطلاع دی۔

پولیس ویمن آدھے گھنٹے میں میرے فلیٹ میں پہنچ گئی تھی، پولیس ویمن نے وہ رقم اپنے قبضے میں لی اور میرے زخم پر مرہم پٹی کی۔

پولیس نے ریسٹورنٹ کے مالک کو حراست میں لیا تو اس نے کہانی گڑھنے کے لیے کہا کہ وہ جھوٹ بول رہی ہے اور پیسے چاہئے اس لیے یہ سب کہانی بنائی ہے۔

دبئی کی عدالت نے مقدمے کی سماعت 25 ستمبر تک ملتوی کردی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں