The news is by your side.

Advertisement

ایک لاکھ ٹن کچرا اٹھا لیا، اب ڈسٹ بن چوری ہونے لگے ہیں: وزیر بلدیات سندھ

کراچی: وزیر بلدیات سندھ ناصر حسین شاہ نے کہا ہے کہ شہر میں پرانا جمع ایک لاکھ ٹن کچرا اٹھایا جا چکا ہے، جب کہ 15 لاکھ ٹن سے زیادہ کچرا کراچی کی شاہراہوں پر موجود ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی شہر میں جاری صفائی مہم کے حوالے سے جائزہ اجلاس منعقد ہوا، بریفنگ میں کہا گیا کہ وزیر اعلیٰ کی سربراہی میں جاری صفائی مہم کے اچھے نتایج نکلے ہیں، روزانہ کی بنیادوں پر سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ الگ کچرا اٹھا رہا ہے۔

اجلاس میں کہا گیا کہ شہر کی سڑکوں کی ٹوٹ پھوٹ کی مرمت بھی کی جا رہی ہے۔ وزیر بلدیات سندھ نے کہا کہ کراچی میں نیا مسئلہ سامنے آیا ہے، اب ڈسٹ بن چوری ہونے لگے ہیں۔

ناصر حسین شاہ کا کہنا تھا سالڈ ویسٹ مینجمنٹ بورڈ کی وجہ سے بہتری آ گئی ہے، 12 ہزار ٹن یومیہ کچرا اٹھانے کی استعداد ہو چکی ہے، ہم صفائی مہم میں ڈی ایم سیز کی عملی شراکت چاہتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  سندھ حکومت کی کراچی میں ‌ خصوصی صفائی مہم کا آج سے آغاز

واضح رہے سندھ حکومت کراچی میں صفائی مہم کے لیے پانچ کروڑ روپے کے فنڈز اور مشینری فراہم کر چکی ہے، وزیر اعلیٰ سندھ اس مہم کی نگرانی کر رہے ہیں۔

دریں اثنا، وفاقی وزیر برائے بحری امور علی زیدی نے ایک تقریب سے خطاب میں کہا کراچی میں سڑکوں کی صورت حال بہت خراب ہے، بڑے صنعت کاروں نے گھروں سے فیکٹریاں چلانا شروع کر دیا ہے اور سائٹ ایریا جانا چھوڑ دیا ہے۔

انھوں نے کہا ایف ڈبلیو او کے تعاون سے نالوں کی صفائی کا کام سنبھالا، اگلے دن ڈی ایم سی کھڑی ہو جاتی کہ ہم کچرا اٹھائیں گے، کچرا کنڈیوں کو ٹھیکے پر فروخت کیا جاتا ہے، اس کچرے میں لوہے کا سامان، تاریں وغیرہ ہوتی ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں