site
stats
عالمی خبریں

اسپین کےایک اورریستوران میں ٹھگوں کی واردات

میڈرڈ: اسپین میں ریستوران کی مالک کاکہناہےکہ 160افراد ان کے ریستوران میں ہزاروں یوروں کا کھاناکھاکربل اداکیے بغیر فرار ہوگئے۔

تفصیلات کےمطابق اسپین کے ریستوران ال رینکون ڈی پیپن کی مالک لورا ایرئیس کاکہناہےکہ 160افراد پر متشمل گروپ نے انہیں بتایا کہ وہ شادی کی ایک تقریب کا انعقاد کرناچاہتے ہیں اور اس کے لیےسادہ ساکھانا منگوایا۔

ریستوران کی مالک نے کہاکہ گروپ نے ایک ہزار یورو بکنگ کےوقت ادا کیےلیکن کھانے اور مشروبات کی مد میں دس ہزار یورو کا بل بنا۔انہوں نےکہاکہ کھاناکھانے کےپانچ منٹ کے اندر تمام افراد اچانک غائب ہوگئے۔

لورا ایرئیس نےان کے ریستوران میں ہونے والی اس واردات سے پولیس کو آگاہ کردیا پےاورانہوں نےکہاکہ یہ لوگ تصویروں سے پہچانےجاسکتے ہیں۔

خیال رہےکہ تین روز قبل اسپین کے ریستوارن میں اسی طرح کی واردات ہوئی تھی اوریہ دونوں ریستوان دس کلو میٹر کے فاصلے پر واقع ہیں۔

مزید پڑھیں:اسپین کے ریستوران میں 120افراد کھاناکھاکرفرار

یاد رہےکہ گذشتہ ہفتے اسپین کے شمالی مغربی علاقے بیمبائبرمیں ایک ریستوران کے مالک کے مطابق 120 کے قریب افراد اس کے ریستوران میں کھانا کھانے کے بعد بل ادا کیے بغیر فرار ہو گئے۔

واضح رہےکہ اینٹونیو روڈرج نے کہا تھاکہ وہ گذشتہ 35 برس سے یہ کاروبار کر رہے ہیں لیکن اس سے قبل ان کے ساتھ کبھی ایسا واقعہ پیس نہیں آیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top