The news is by your side.

Advertisement

رہن سہن کے لیے بہترین مانے جانے والے شہروں پر کرونا وبا نے کیا اثر ڈالا؟

پیرس: کرونا وائرس کی وبا نے زندگی گزارنے کے لیے دنیا کے بہترین شہروں کی فہرست کو بھی ہلا کر رکھ دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جہاں ایک طرف کاروباری اور سماجی نظام کرونا وبا سے درہم برہم ہوا، وہاں دوسری طرف رہن سہن کے لیے بہترین مانے والے شہروں کی رینکنگ بھی اس سے شدید متاثر ہوئی، نیز کرونا کے بعد شہروں کو جانچنے کا طریقہ بھی بدل گیا ہے۔

ایک سروے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایک نئی تحقیق میں معلوم ہوا کہ آسٹریلیا، جاپان اور نیوزی لینڈ زندگی گزارنے کے لحاظ سے یورپی ممالک سے رینکنگ میں اوپر چلے گئے ہیں۔

اس سلسلے میں اکانومسٹ انٹیلیجنس یونٹ نے رواں برس ایک سروے کیا، جس میں کہا گیا ہے کہ نیوزی لینڈ کا شہر آکلینڈ زندگی بسر کرنے کے لیے دنیا کے بہترین شہروں میں سرفہرست آ گیا ہے، اس کے بعد جاپانی شہروں اوساکا اور نمبرپرآسٹریلیا کا شہرایڈلیڈ کا نمبر آتا ہے۔

رپورٹ کے مطابق دس سر فہرست شہرو ں میں آسٹریلیا کا شہر پرتھ اور نیوزی لینڈ کا شہر ویلنگٹن بھی شامل ہو گئے ہیں، ان تمام شہروں نے کرونا کی وبا کے خلاف بہت تیزی سے اقدامات کیے۔

سروے میں کہا گیا ہے کہ آکلینڈ کرونا کی وبا پر کامیابی سے قابو پانے کی وجہ سے فہرست میں پہلے نمبر پر آیا ہے، جس کے بعد اس شہر کو لاک ڈاؤن کا سامنا بھی نہیں کرنا پڑا۔

اس کے برعکس یورپی ممالک اس برس کے اعداد و شمار میں بہت پیچھے رہے، سروے کے مطابق اس سے قبل 2018-20 میں آسٹریا کا شہر ویانا سرفہرست تھا، جو بارہویں نمبر پر آ گیا ہے، اس فہرست میں نیچے آنے والے دیگر 8 شہر بھی یورپ کے ہیں۔

شمالی جرمنی کا شہر ہیمبرگ 34 درجے کم ہو کر 47 ویں نمبر پر آ گیا ہے، جرمنی اور فرانس کے اسپتالوں پر وبا کی وجہ سے دباؤ بڑھا جس کے باعث وہاں صحت کا نظام خراب ہو گیا، امریکی شہر ہونولولو وبا پر قابو پانے اور ویکسینیشن کی وجہ سے اس فہرست میں 46 ویں سے 14 ویں نمبر آ گیا ہے۔

گلوبل لائیوایبلٹی انڈیکس 2021 کے مطابق دس سر فہرست شہر مندرجہ ذیل ہیں:

آکلینڈ، نیوزی لینڈ (96.0)
اوساکا، جاپان (94.2)
ایڈلیڈ، آسٹریلیا (94.0)
ویلنگٹن، نیوزی لینڈ (93.7)
ٹوکیو، جاپان (93.7)
پرتھ، آسٹریلیا (93.3)
زیوریخ، سویٹزرلینڈ (92.8)
جنیوا، سویٹزرلینڈ (92.5)

Comments

یہ بھی پڑھیں