سنہ 2017: اقتصادی حالات بھی دگرگوں رہے -
The news is by your side.

Advertisement

سنہ 2017: اقتصادی حالات بھی دگرگوں رہے

اسلام آباد: سال 2017 اقتصادی اعتبار سے بھی حوصلہ افزا ثابت نہیں ہوا۔ ٹیکسوں کی بھرمار اور سیاسی عدم استحکام کے باعث تاجر برادری پریشان رہی۔

تفصیلات کے مطابق سال 2017 تاجر برادری کے لیے اطمینان بخش ثابت نہیں ہوا۔ ٹیکسوں کے بوجھ نے تاجروں کو پریشان کیے رکھا۔

دھرنوں، سیاسی عدم استحکام اور ملک میں گردش کرتی افواہوں نے رہی سہی کسر پوری کردی۔

ملک میں سیاست کے میدان میں رونما ہونے والی تبدیلوں کے باعث محتاط اندازے کے مطابق ایک سال کے دوران 400 ارب روپے کی کاروباری سرگرمیاں متاثر ہوئیں۔

تاجر برادری نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ نئے سال کا سورج معاشی ترقی کی نوید کے ساتھ طلوع ہوگا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں