The news is by your side.

Advertisement

مصر: معمولی جھگڑے نے خاندان اجاڑ دیا

قاہرہ: مصر میں میاں بیوی کے درمیان معمولی تکرار نے پورے خاندان کو اجاڑ دیا۔

تفصیلات کے مطابق مصر میں ایک ڈینٹسٹ نے اپنی اہلیہ کو بچوں کے سامنے قتل کر دیا، قاتل نے چاقو کے گیارہ وار کیے جو جاں لیوا ثابت ہوئے۔

العربیہ نیوز کے مطابق یہ افسوس ناک واقعہ مصر کے شمالی علاقے کی کمشنری الدقھلیہ میں پیش آیا، جہاں 29 سالہ دندان ساز محمود عبدالہادی نے اپنی 26 سالہ اہلیہ لیڈی ڈاکٹر یاسمین سلیمان کو تین بچوں کے سامنے انتہائی بے دردی سے قتل کر دیا۔

قتل کی یہ ہول ناک واردات عیدالاضحیٰ کے دنوں میں ہوئی، میاں بیوی کے درمیان معمولی سے خانگی امور پر تنازع ہوا، جو بڑھتے بڑھتے انتہائی حد تک پہنچ گیا، اور میاں نے بیوی کو چاقو کے پے در پے وار سے قتل کر دیا، بچوں کے چیخنے پر قاتل آلہ قتل کو نعش پر ہی پھینک کر فرار ہوگیا۔

رپورٹس کے مطابق قاتل نے انتہائی طیش کی حالت میں اہلیہ پر چاقو کے گیارہ وار کیے جس سے وہ موقع پر ہی ہلاک ہو گئیں۔

ماں کو خون میں لت پت دیکھ کر تینوں بچوں نے چیخنا شروع کر دیا تھا، جس سے گھبرا کر قاتل موقع واردات سے فرار ہو گیا، جب کہ پڑوسی وہاں پہنچ گئے۔

پولیس کے مطابق پڑوسیوں نے فوری طور پر سیکیورٹی حکام کو طلب کیا، جس پر اہل کاروں نے جائے واردات پہنچ کر نعش اور آلہ قتل اپنی تحویل میں لے لیا، حکام کی جانب سے مفرور قاتل کی گرفتاری کے وارنٹ بھی جاری کر دیے گئے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں