The news is by your side.

Advertisement

جانوروں کو زندہ دفنانے کا انکشاف

لیما: جنوبی امریکا میں واقع ملک ’پیرو‘ میں دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لیے جانوروں اور بچوں کو زندہ دفن کرنے کا انکشاف سامنے آیا ہے۔

کینیڈا کی یونیورسٹی آف کیلگری کی جانب سے کی جانے والی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی کہ پیرو میں قدیم تہذیب ’انکا‘ کے نام پر بچوں اور جانوروں کو زندہ بھینٹ چڑھایا گیا ہے۔

ماہرین کے مطابق قدیم تہذیب انکا کے ماننے والے دیوتاؤں کو خوش کرنے کے لیے جانوروں اور بچوں کو زندہ دفن کرتے تھے۔ تحقیق کے دوران ماہرین کو اونٹ نما جانور لاما کے باقیات ملے، جس کے بارے میں ماہرین نے بتایا کہ انہیں زندہ مدفون کیا گیا۔

تحقیق کے مطابق سفید لاما کی پانچ لاشیں ایک جگہ سے دریافت ہوئیں، اُن کے جسموں پر کسی چوٹ، زخم اور کاٹنے کے نشانات نہیں ملے۔

تحقیقی ٹیم کے سربراہ پروفیسر لیڈیو والدیز کا کہنا تھا کہ دریافت ہونے والی باقیات سے اب تک یہ بات واضح نہیں ہوسکی کہ ان کی موت کیوں ہوئی مگر ہم اپنے مشاہدے کی بنیاد پر اس نتیجے پر پہنچے کہ انہیں زندہ دفن کیا گیا۔

اُن کا کہنا تھا کہ ’چونکہ جانوروں کے حلق پر بھی کوئی نشان نہیں تھا اس لیے کہا جاسکتا ہے کہ انہیں انکا کے پیرو کاروں نے زندہ بھینٹ چڑھایا‘۔

پروفیسر لیڈیو کا کہان تھا کہ ’انکا باشندے لاما کو مقدس سمجھتے تھے کیونکہ ان سے وہ دودھ، گوشت، کھال اور اون حاصل کرتے تھے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل نیشنل جیوگرافک کی تحقیقی ٹیم کو 140 بچوں کی لاشیں ملی تھیں جنہیں نشہ آور اشیا کھلا کر زندہ دفن کرنے کیا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں