The news is by your side.

Advertisement

انہیلر اور آنکھوں کے ڈراپس استعمال کرنے سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے؟

کراچی: طبی ماہرین نے کہا ہے کہ سحر و افطار میں تلی ہوئی، مصالحے دار، چٹپٹی اشیا کھانے اور سافٹ ڈرنکس کے استعمال سے گریز کریں، انہیلر اور آنکھوں کے ڈراپس استعمال کرنے سے روزہ نہیں ٹوٹتا۔

تفصیلات کے مطابق جناح اسپتال کراچی میں پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن (پیما) کے زیر اہتمام روزہ اور صحت کے موضوع پر سیمینار کا انعقاد کیا گیا، جس میں ماہرین نے روزے کے ٹوٹنے اور نہ ٹوٹنے اور سحر و افطار میں کھانے پینے سے متعلق طبی ماہرین کی اہم ہدایات دیں۔

طبی ماہرین نے کہا کہ سحر و افطار میں تلی ہوئی، مصالحے دار، چٹپٹی اشیا کھانے اور سافٹ ڈرنکس کے استعمال سے گریز کریں، شوگر، دل اور گردے کے امراض میں مبتلا مریض اپنے معالج کے مشورے پر روزہ رکھیں۔

ماہرین کا کہنا تھا روزے کے دوران سانس کے مریض تکلیف کی صورت میں انہیلر استعمال کر سکتے ہیں، اسی طرح آنکھوں میں ڈراپس ڈالنے سے روزہ نہیں ٹوٹتا، البتہ روزے کے دوران کان اور ناک میں ڈراپس ڈالنے سے گریز کریں۔

پروگرام کے مہمان خصوصی جناح سندھ میڈیکل یونیورسٹی کے وی سی ڈاکٹر امجد سراج میمن تھے، ماہر امراض قلب ڈاکٹر فواد فاروق، ماہر امراض گردہ پروفیسر عبدالمنان، ماہر امراض سانس ڈاکٹر مصور انصاری، ماہر امراض ذیابطیس پروفیسر عبدالباسط نے سیمینار سے خطاب کیا۔

انھوں نے کہا کہ شوگر کے مریض اگر صرف دواؤں پر ہیں تو دواؤں کی خوراک معالج کے مشورے سے لیں اور روزہ رکھیں، گردے کے مریض ڈاکٹر سے مشورہ کریں اور اگر شدید بیماری نہیں ہے تو روزہ ضرور رکھیں، سانس کے مریض سخت تکلیف کی صورت میں روزے کی حالت میں انہیلر لے سکتے ہیں اس سے روزہ نہیں ٹوٹتا۔

ماہرین کا کہنا تھا کہ آنکھوں کی دوا یعنی قطرے آنکھوں میں ڈالے جا سکتے ہیں اس سے بھی روزہ نہیں ٹوٹتا، لیکن کان اور ناک میں قطرے ڈالنے سے گریز کریں، یہ حلق میں جاتے ہیں اور اس سے روزہ ٹوٹ سکتا ہے۔

ماہرین نے مشورہ دیا کہ کاربوہائیڈریٹس کی بجائے پروٹین لینا بہتر ہے، افطاری کے فوراً بعد ایک ساتھ بہت زیادہ پانی پینے سے گریز کریں، تھوڑا تھوڑا وقفے وقفے سے پانی پئیں، ماہرین کا کہنا تھا کہ تراویح ایک بہترین جسمانی عمل ہے، کوشش کریں سوائے مجبوری کے تراویح کھڑے ہو کر پڑھی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں