The news is by your side.

Advertisement

ٹیکنالوجی نے5 سو سال پرانی کھونپڑی سے چہرہ بنا ڈالا

وارسا: ماہرین نے تھری ڈی ٹیکنالوجی کا استعمال کر کے 5 سو سال پرانی انسانی کھونپڑی سے چہرہ بنا ڈالا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ماہرین کو تحقیق کے دوران مغربی پولینڈ کے علاقے ولیکو پلسکا میں واقع نیڈو ویڈزنی گاؤں کے قریب قبرستان سے 5 سو سال پرانی انسانی کھونپڑی ملی جسے انہوں نے تھری ڈی ٹیکنالوجی کی مدد سے انسانی چہرے میں بدل ڈالا۔

ماہرین کے مطابق یہ بات واضح نہیں کہ آیا وہ تاجر تھا یا کاریگر لیکن انہیں یقین ہے کہ وہ 16ویں صدی میں ایسا ہی نظر آتا ہو گا جیسا تھری ڈی ٹیکنالوجی کی مدد سے چہرہ بنایا گیا ہے۔

ماہرین آثار قدیمہ کا کہنا ہے کہ تحقیق کے دوران متعدد غیر معمولی دریافتیں کی گئیں، اور اسی دوران انہیں اس شخص کی کھونپڑی ملی جس کی عمر اس وقت 35 سے 44 سال کے درمیان ہوگی۔

غیرملکی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے ماہرین آثار قدیمہ مارکین کرزپکو وسکی کا کہنا تھا کہ یہ شخص کون تھا؟ مجھے کوئی اندازہ نہیں لیکن وہ ڈزونوو نامی علاقے کا رہائشی تھا۔

ماہرین نے بتایا کہ تحقیق کے دوران 21 قبروں کا معائنہ کیا گیا جن میں سے ایک کنگال علیحدہ پایا گیا جس کے منہ میں ایک سکہ تھا جسے سیگسمنڈ تھری واسا پینی کے نام سے جانا جاتا ہے، اس سکے کی مدد سے سائنس دانوں نے اس شخص کی تدقین کے وقت کا تعین کیا جو 17 ویں صدی تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں