The news is by your side.

Advertisement

فیصل واوڈا نے تاحیات نااہلی کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا

اسلام آباد :  پاکستان تحریک انصاف کے رہنما  فیصل واوڈانے تاحیات نا اہلی کافیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا، جس میں کہا اسلام آبادہائی کورٹ نےعجلت میں اپیل خارج کی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے رہنما نے الیکشن کمیشن اور ہائیکورٹ کے تاحیات نا اہلی کے فیصلوں کیخلاف اپیل دائر کردی۔

فیصل واوڈا کی اپیل ایڈووکیٹ وسیم سجاد نے سپریم کورٹ میں دائر کی، اپیل میں الیکشن کمیشن اورمخالف شکایت کنندگان کوفریق بنایاگیا ہے۔

اپیل میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کوتاحیات نا اہل کرنے کا اختیار نہیں تھا، الیکشن کمیشن مجاز کورٹ آف لا نہیں۔

مزید پڑھیں : اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصل واوڈا کی اپیل پر محفوظ فیصلہ سنا دیا

فیصل واوڈا نے مزید کہا کہ اسلام آبادہائی کورٹ نےعجلت میں اپیل خارج کی، استدعا ہے کہ الیکشن کمیشن کا نااہلی کافیصلہ کالعدم قرار دیکر بحال کیاجائے۔

یاد رہے 9 فروری کو الیکشن کمیشن نے فیصل واوڈا کی دوہری شہریت کیس کا محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے انہیں نااہل قرار دے دیا تھا۔

الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری مختصر فیصلے میں کہا گیا تھا کہ فیصل واوڈا نے اپنےکاغذات نامزدگی میں غلط بیانی سےکام لیا اور کاغذات نامزدگی کےوقت جعلی حلف نامہ جمع کرایا،فیصل واوڈا کو آرٹیکل 62ون ایف کےتحت نااہل قرار دیا گیا، وہ صادق اور امین نہیں رہے۔

بعد ازاں فیصل واوڈا کی جانب سے الیکشن کمیشن کے فیصلے کے کیخلاف اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی تھی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے فیصل واوڈا کی تاحیات نااہلی کے فیصلے کے خلاف درخواست خارج کر دی تھی اور فیصلے میں کہا تھا کہ الیکشن کمیشن نے 9 فروری کو فیصل واوڈا کو نااہل کیا تھا، فیصل واوڈا الیکشن کمیشن کے تاحیات نااہلی کے فیصلے کے خلاف مطمئن نہ کرسکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں