The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: 10 لاکھ نقلی چارجر ضبط کرلیے گئے

ریاض: سعودی اسٹینڈرڈ آرگنائزیشن نے گزشتہ ایک سال کے دوران مختلف مارکیٹس سے 10 لاکھ نقلی چارجر اور دیگر الیکٹرانک اشیا ضبط کرلیں۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق وزارت تجارت کا کہنا ہے کہ سال 2019 کے دوران یومیہ 2 ہزار 739 نقلی چارجر اور الیکٹرانک اشیا ضبط کی گئیں، سال کے اختتام تک یہ تعداد 10 لاکھ سے تجاوز کرگئی۔

سعودی اسٹینڈرڈ آرگنائزیشن کا کہنا ہے کہ آرگنائزیشن چارجرز کے حوالے سے اپنے اسٹینڈرڈ مقرر کیے ہوئے ہے۔

ان کے مطابق چارجر درآمد کرنے والے تاجروں کو اس کا پابند بنایا جا رہا ہے، تاجروں پر ایک پابندی یہ لگائی گئی ہے کہ وہ کوئی بھی چارجر سعودی مارکیٹ میں لانے سے قبل آئی ای سی ای ای کا سرٹیفکیٹ ضرور حاصل کریں۔

اسٹینڈرڈ آرگنائزیشن نے ایک اور پابندی یہ لگائی ہے کہ درآمد کرنے والا تاجر فیکٹری سے براہ راست رابطہ کرے، یہ پابندی اس لیے لگائی گئی ہے تاکہ سعودی بازاروں کو نقلی چارجر سے بچایا جاسکے۔

انہوں نے بتایا کہ سال 2019 کے دوران 7 ہزار 560 لائسنس جاری کیے گئے، یہ لائسنس لینے والے وہ تاجر تھے جو آئی ای سی ای ای کی شرط پوری کر رہے تھے۔

اس حوالے سے سنہ 2018 کے مقابلے میں 82 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔

سعودی اسٹینڈرڈ آرگنائزیشن کا مزید کہنا ہے کہ سعودی محکمہ کسٹم پر یہ پابندی لگائی گئی ہے کہ وہ ایسا کوئی چارجر یا الیکٹرانک سامان ملک میں داخل نہ ہونے دیں جو سعودی اسٹینڈرڈ آرگنائزیشن کے معیار پر پورے نہ اترتے ہوں۔

یاد رہے کہ آرگنائزیشن کے افسران صارفین کو نقلی اشیا سے بچانے کے لیے اچانک چھاپے مارتے ہیں، سنہ 2019 کے دوران 6 لاکھ 12 ہزار چھاپے مارے گئے۔ یہ سنہ 2018 کے مقابلے میں 52 فیصد زیادہ تھے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں