The news is by your side.

بھارت: ’سی آئی ڈی‘ شو سے متاثر باپ نے بیٹی کا قتل کردیا

مہاراشٹر : بھارت کی ریاست مہاراشٹر میں ایک انوکھا واقعہ پیش آیا ہے جہاں ایک شخص نے انڈین کرائم سیریز ’سی آئی ڈی‘ سے متاثر ہو کر اپنی بیٹی کو قتل کر دیا۔

بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز کے مطابق مہاراشٹر کے شہر ناگپور میں پولیس نے ایک 42 سالہ شخص کو گرفتار کیا ہے جس پر الزام ہے کہ اس نے مبینہ طور پر اپنی بیوی کو ’سبق سکھانے کے لیے‘ اپنی 16 سالہ بیٹی کو قتل کیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم مشہور ٹیلی ویژن کرائم سیریز ’سی آئی ڈی‘ کی ایک قسط سے متاثر تھا، ظالم باپ ڈرامائی انداز میں اپنی بیٹی کے قتل کو خودکشی کا رنگ دیا۔

بھارت کی کالمنا پولیس کے مطابق ’ملزم گڈو چھوٹے لال راجک اپنی دوسری بیوی کوشلیا  اور تین بچوں کے ساتھ رہتے تھے۔ 2016 میں پہلی بیوی کی خودکشی سے موت کے بعد انہوں نے چند سال قبل دوسری شادی کی۔

پولیس نے بتایا کہ ’ملزم کی اہلیہ کوشلیا نے رواں سال 10 اکتوبر کو اپنے شوہر کی طرف سے مبینہ ذہنی اور جسمانی تشدد کی وجہ سے گھر چھوڑ دیا تھا۔

بھارتی پولیس کے مطابق چھ نومبر کو ملزم کی بیٹی ماہی کی چھت سے لٹکی ہوئی لاش ملی۔

پولیس جب موقع پر پہنچی تو انہیں ’خودکشی‘ سے قبل لکھے گئے پانچ خط ملے جس میں ماہی نے اپنی سوتیلی ماں، ماموں، خالہ اور دادا پر اس کی ’زبردستی شادی‘ کرنے کا الزام لگایا تھا۔

پولیس نے بتایا کہ ان نوٹس میں اس کے ماموں سنتوش پیپارڈے  پر ہراسانی کا الزام بھی لگایا گیا ہے۔

اہلکار کا کہنا تھا کہ ہمیں شک ہوا  تو گڈو کا فون تفتیش کے لیے قبضے میں لے لیا۔ جس میں ہمیں ماہی کی ڈرامائی تصویر ملی جس کے گلے میں پھندا تھا۔ مزید پوچھ گچھ پر باپ نے بیٹی کو قتل کرنے کا اعتراف کیا۔

ملزم نے اپنی بیوی کے واپس آنے سے انکار کرنے کے بعد اسے اور رشتے داروں کو سبق سکھانے کے لیے سی آئی ڈی کی ایک قسط سے آئیڈیا لیا اور ایک منصوبہ بنایا۔

پولیس کے مطابق ملزم نے اس منصوبے کا اپنی بیٹیوں سے ذکر کیا اور ماہی کو من گھڑت بیان کے ساتھ نوٹس لکھنے کا کہا۔

ناگپور کے ایڈیشنل کمشنر پولیس نوین ریڈی نے بتایا کہ چھ نومبر کو گڈو نے اپنی بیٹیوں کو صبح تین بجے جگایا اور انہیں بتایا کہ اسے پولیس کو دکھانے کے لیے ماہی کی تصویر کی ضرورت ہے۔

اس کے بعد اس نے مبینہ طور پر چھت سے رسی باندھی اور اپنی بیٹی کو میز پر کھڑے ہونے کو کہا۔ ملزم گڈو کے 12 سالہ بیٹے زیا نے موبائل فون پر اس وقت تصویر کھینچی جب ماہی گلے میں پھندا ڈالے کھڑی تھی۔

سفاک گڈو نے پھر میز کو ٹانگ ماری جس کے بعد ماہی نے مدد کے لیے پکارا لیکن ملزم نے اسے نہیں بچایا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے اپنی بیٹی کو یہ کہہ کر منصوبے میں شامل کیا تھا کہ وہ ان کے رشتہ داروں کو سبق سکھانا چاہتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں