The news is by your side.

Advertisement

پاکستان 35 لاکھ افغان مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے: فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ پاکستان افغانستان کے معاملے پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے، پاکستان 35 لاکھ افغان مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے۔

وفاقی وزیر برائے اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے غیر ملکی نشریاتی ادارے کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان نے طویل عرصہ افغانوں کے ساتھ کام کیا ہے، سنہ 1988 میں روس افغانستان سے نکلا تو بہت سے مسائل رہ گئے تھے، اب امریکا اور نیٹو افواج نے افغانستان سے تیزی سے انخلا کیا ہے.

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پاکستان افغانستان کے معاملے پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے، پاکستان 35 لاکھ افغان مہاجرین کی میزبانی کر رہا ہے۔ افغانستان کی صورتحال کے باعث مخلوط حکومت ضروری ہے۔

انہوں نے کہا کہ افغان مسئلے کے حل کے لیے عالمی برادری کی کوششیں ضروری ہیں، پاکستان نے افغانستان کے حوالے سے ذمہ دارانہ کردار ادا کیا۔ ماضی میں افغانستان کو تنہا چھوڑا گیا، دنیا ماضی کی غلطی دہرا رہی ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پاکستان مستحکم افغانستان کے لیے کوشاں ہے، ہم خطے اور بین الاقوامی طاقتوں سے مل کر کام کر رہے ہیں۔ افغانستان میں جامع حکومت بننی چاہیئے۔ افغانستان میں بدامنی پاکستان اور دنیا کے لیے نقصان دہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس وقت مہاجرین کو کوئی بحران نہیں ہے، ہماری سرحدوں پر معمول کے مطابق کام جاری ہے، پی آئی اے کے ذریعے 45 سو افراد کا کابل سے انخلا کیا گیا ہے۔

فواد چوہدری کا مزید کہنا تھا کہ روس، چین، پاکستان اور افغانستان پر مشتمل ٹرائیکا پلس اہم ہے، اس حوالے سے خلیجی ممالک اور ایران کا بھی اہم کردار ہے۔ پاکستان اور ترکی اس معاملے پر مل کر کام کر رہے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں