The news is by your side.

Advertisement

پنجاب میں چیف سیکریٹری اور آئی جی کو سمجھ نہیں آرہا کس کی بات سننی ہے: فواد چوہدری

اسلام آباد: سابق وفاقی وزیر اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ پنجاب میں ابھی تک کابینہ نہیں بنی، چیف سیکریٹری اور آئی جی کو سمجھ نہیں آرہا کس کی بات سننی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وفاقی وزیر اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنما فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ سال کے آخر میں گندم کی خریداری نہ ہونے سے آٹے کا بحران پیدا ہوجائے گا، پیپلز پارٹی کو راضی کرنے کے لیے پنجاب کا پانی سندھ کو دیا جارہا ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پنجاب میں ابھی تک کابینہ نہیں بنی، پنجاب کی اتنی بڑی آبادی کو انتظامی بحران میں ڈالا گیا، گندم کا سرکاری کوٹہ بند کر دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ چیف سیکریٹری اور آئی جی اپنی من مانی کر رہے ہیں، چیف سیکریٹری، آئی جی کو سمجھ نہیں آرہا کس کی بات سننی ہے، انتظامی فیصلے کرنے کے لیے پنجاب میں حکومت ہی نہیں۔ پنجاب کے انتظامی بحران پر فوری ایکشن کی ضرورت ہے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ نے 9 تاریخ کو آرٹیکل 63 اے کیس کی سماعت رکھی ہے، جتنی جلدی آرٹیکل 63 اے پر فیصلہ آئے گا اتنا جلدی استحکام ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان آج میانوالی سے جلسوں کا آغاز کر رہے ہیں، جلسوں کے دوران عمران خان لانگ مارچ کی تاریخ کا اعلان کریں گے۔ تحریک انصاف کے جلسے 20 مئی تک جاری رہیں گے۔

فواد چوہدری کا مزید کہنا تھا کہ اداروں کا احترام ہم سب پر لازم ہے، ہمیں ہر صورت افواج پاکستان کے کردار کو تحفظ دینا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں