The news is by your side.

Advertisement

لگتا ہے پی پی اور ن لیگ کی طلاق ہوگئی ہے، فواد چوہدری

اسلام آباد : وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ لگتا ہے پی پی اور ن لیگ کی طلاق ہوگئی ہے ، مولانا کے چھوارےتگڑے نہیں وگرنہ شادی برقرار رہتی۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا پاکستان جس گرداب میں پھنساتھااس سے باہرآیاہے، اس سال کا بجٹ پچھلےسالوں کی کارکردگی کا عکاس ہوگا ،ترقیاتی بجٹ میں اضافہ کیاجارہا ہے اور ملازمین کو ریلیف دیاجارہا ہے۔

اپوزیشن کے حوالے سے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ اپوزیشن سےتعلقات میں بہتری چاہتے ہیں، شہبازشریف اور مریم نواز کا آپس میں جھگڑا ختم ہوا، ن لیگ فیصلہ کرے کہ ان کی پالیسی کیا ہے، ہم پہلے بھی اصلاحات پر بات چیت کرنا چاہتے ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا مریم نواز نے ن لیگ کو پی پی کےحوالے کردیا، لگتا ہے پی پی اور ن لیگ کی طلاق ہوگئی ہے، دلہن پہلے سندھ گئی ناراض ہو کر واپس آگئی ، چاہتے تھے شادی چلتی رہے گی لیکن طلاق ہو گئی، مولانا کے چھوارے تگڑے نہیں وگرنہ شادی برقرار رہتی، مولانا نکاح کریں سیاست ان کے بس کی بات نہیں۔

جہانگیرترین گروپ کے حوالے سے فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین کا دھڑا پی ٹی آئی کےساتھ ہے، جوان کے کھانوں میں جاتے ہیں ذاتی تعلق کی وجہ سے جاتے۔

وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ اپوزیشن کا پاکستان میں کردار ہے لیکن اپوزیشن تنکوں کی طرح بھکری ہوئی ہے، مولانا، بلاول اورمریم کا قبلہ ایک دوسرے سے الگ ہے، مولانا سوسال میں بھی اقتدار میں نہیں آئیں گے، مولانا کو اپنے کشتے بدلنے چاہئیں، کمزور لگ رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پوری دنیاکوروناسےلڑ رہی ہے ، بھارت کی معیشت منفی 4.3سے ڈوب رہی ہے ، لیکن فیٹف میں پاکستان کو کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

فواد چوہدری نے کہا شہبازشریف کو تحریری طور پر لکھا ہے ہمارے ساتھ آکر بیٹھیں، جوسیاست میں ہوتے ہیں عشائیے دیتے ہیں،بات چیت بھی کرتے ہیں، ہماری اپنی ریڈ لائنز ہیں ان کی اپنی ریڈ لائنز ہیں۔

وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ تنکوں کی طرح اپوزیشن بکھری ہوئی ہے ، انتخابی اور عدالتی اصلاحات پر حکومت کا اپوزیشن کو ساتھ دینا چاہئے، الیکشن کمیشن ووٹنگ مشین کو آگے لائے اگر کوئی خرابی ہے تو بتائے، الیکشن کمیشن پر زور دیا ہے کہ اس ٹیکنالوجی کو استعمال کرے ، الیکٹرونک سسٹم میں کوئی نقص ہے تو بتائے۔

انھوں نے مزید کہا شہبازشریف کو تحریری طور پر لکھا ہے ہمارے ساتھ آکر بیٹھیں، جوسیاست میں ہوتےہیں عشائیےدیتےہیں،بات چیت بھی کرتے ہیں، ہماری اپنی ریڈ لائنز ہیں ان کی اپنی ریڈ لائنز ہیں۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ پالیسی فیصلے حکومت نےکرنے ہیں، وفاق وصوبوں میں باآسانی بجٹ تقسیم ہوگااس پر ہمیں مشکل نہیں، اتحادیوں نےحمایت کا یقین دلایاہے، اداروں میں مسائل ہیں بے پناہ میں سیاسی بھرتیاں کی گئیں، اے پی پی میں رپورٹرز 206سے700منیجرنگ کی سیٹ پرہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں