The news is by your side.

Advertisement

بڑے فیصلوں پر پارلیمانی سربراہان سے مشاورت کریں گے: فواد چوہدری

اسلام آباد: وفاقی وزیرِ اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ کابینہ نے قومی سلامتی پر تمام جماعتوں کو ساتھ لے کر چلنے کاعزم کیا ہے، جو بھی بڑے فیصلے ہوں گے ان پر پارلیمانی سربراہوں سے مشاورت کی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فواد چوہدری نے کہا کہ ہمارے لیے اچھا موقع ہے کہ ملک کے اندر اتفاق رائے کو قائم رکھیں، حالیہ صورتِ حال میں حکومت اور اپوزیشن نے یک جہتی کا مظاہرہ کیا۔

نواز شریف بیرون ملک سے ڈاکٹر بلانا چاہتے ہیں تو ضرور بلائیں، ان کے پاس وسائل ہیں بیرون ملک سے ڈاکٹر بلا سکتے ہیں۔

فواد چوہدری

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ہم نہیں چاہتے کہ چھوٹی چھوٹی باتوں پر یک جہتی کے مظاہرے کو نقصان پہنچے، نیشنل ایکشن پلان پر تمام سیاسی جماعتوں نے دستخط کیے تھے، ہم چاہتے ہیں یک جہتی کے اظہار کو ایسے ہی آگے بڑھایا جائے۔

انھوں نے کہا کہ کابینہ نے فیصلہ کیا ہے کہ قومی سلامتی کے معاملات پر اپوزیشن کو ساتھ لے کر چلیں گے، مدارس سے متعلق اقدامات پہلے سے طے شدہ ہیں، اقدامات پچھلی حکومت نے کرنا تھے مگر کسی وجہ سے رک گئے، مذہبی جماعتوں اور دیگر تنظیموں کے تعاون کے شکر گزار ہیں۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ عالمی اخبارات آج پاکستان کے مؤقف کو درست قرار دے رہے ہیں، یہ اخبارات بھارت اور مودی کے بیانیے کو غلط قرار دے رہے ہیں، آج دنیا بھر میں نریندر مودی کے اقدامات کا مذاق بھی اڑایا جا رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  نواز شریف کوبہترین طبی سہولتیں دی جائیں ،وزیراعظم عمران خان کا اعلان

انھوں نے بتایا کہ آج کابینہ کی توجہ غریبوں کی حالت بہتر کرنے پر تھی، کابینہ اجلاس میں غربت کے خاتمے کے لیے پروگرام پر بات چیت ہوئی۔ کابینہ اجلاس میں ایئر بلو کا لائسنس بھی منظور کیا گیا۔

فواد چوہدری نے کہا کہ نوازشریف بیرون ملک علاج کی خواہش کریں گے تو کلینک یہاں بلالیں گے، انھوں نے اتنا پیسا کمایا ہے کس کام آئے گا، وہ بیرون ملک سے ڈاکٹر بلانا چاہتے ہیں تو ضرور بلائیں، ان کے پاس وسائل ہیں بیرون ملک سے ڈاکٹر بلا سکتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں