The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کی ضمانت پر رہائی کا حکم

لاہور : عدالت نے اثاثہ جات کیس میں گرفتار نوازشریف کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کو ایک کروڑ روپے کے مچلکے جمع کراکے ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائی کورٹ میں آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتارسابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کی درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی۔

جسٹس طارق عباسی کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے سماعت کی، ملزم کے وکیل نے کہا کہ میرے مؤکل کو سال 2018 میں گرفتارکیا گیا تھا۔

نیب نے جو ان پر الزامات لگائےان کا ثبوت بھی پیش نہیں کرسکا اور ابھی تک فرد جرم عائد نہیں ہوئی، اس کے علاوہ تفتیش میں اربوں کی جائیداد کا الزام لگایا گیا جبکہ ریفرنس میں108 ملین کاالزام عائد کیا گیا۔

ملزم کے وکیل نے بتایا کہ نیب نے پہلے کہا کہ فواد حسن فواد کےایک پلازہ کی قیمت5ارب روپے ہے، اب نیب کہتا ہے ان کےخاندان کے کل اثاثے1ارب8کروڑ ہیں۔

وکیل کا مزید کہنا تھا کہ سابق پرنسپل سیکریٹری فواد حسن فواد کے نام پر ایک جائیداد بھی نہیں ہے، نیب بیوی اور بھائی کے نام پرجائیداد پر بےنامی کا الزام لگارہا ہے لہٰذا انہیں ضمانت پر رہا کیاجائے۔

دوران سماعت دلائل کے بعد عدالت نے نوازشریف کے سابق پرنسپل سیکرٹری فواد حسن فواد کی ضمانت منظور کرتے ہوئے رہائی ک اپروانہ تھما دیا، لاہور ہائی کورٹ نے فوادحسن فواد کو ایک کروڑ کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں