site
stats
پاکستان

پاکستان کو سیکولرنہیں ہونے دیں گے، مولانا فضل الرحمان

ملتان : جمعیت علماءاسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ تحفظ نسواں کا قانون مردوں کو گھروں سے نکلوانے اور کنگن پہنانے کا قانون ہے۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں پاس ہونے والا تحفظ خواتین قانون آئین پاکستان سے متصادم ہے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملتان میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا.

سربراہ جے یو آئی پھر تحفظ نسواں بل پربرس پڑے اور پنجاب حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا، مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ تحفظ نسواں کا قانون مردوں کو گھروں سے نکلوانے کا قانون ہے۔

وزیراعلیٰ یا وزیراعظم کے ساتھ ایسا ہوا تو کیا ہوگا۔ خواتین پر تشدد روکنے میں ہم حکومت کے ساتھ ہیں،ہم پارلیمنٹ میں اس لئے بیٹھے ہیں کہ قانون سازی ہو.

تحفظ خواتین بل ہمارے معاشرے کا نہیں، اس ملک کو سیکولر نہیں ہونے دیں گے،ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ حکومت بنا نہیں سکتے البتہ حکومت کو گرا ضرورسکتے ہیں۔

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top