The news is by your side.

Advertisement

مطالبات نہ مانے گئے توملک میں افراتفری ہوگی، فضل الرحمان دھمکیوں پر اتر آئے

حکومت سے مذاکرات نہیں ہو رہے، ہم ٹائم پاس کررہے ہیں

اسلام آباد : جمیعت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان دھمکیوں پر اتر آئے اور کہا مطالبات نہ مانے گئے توملک میں افراتفری ہوگی ، حکومت دو سے تین ماہ میں فوری الیکشن کرائے۔

تفصیلات کے مطابق جمیعت علماء اسلام ف کی قیادت بوکھلاہٹ کا شکار ہے اور دھمکیوں پر اتر آئی، سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اعتراف کیا اب ہم بندگلی میں آگئے ہیں، مطالبات نہ مانےگئے تو ملک میں افراتفری ہوگی، ہم گولیاں کھائیں گے اور شہادتیں بھی دیں گے۔

فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ہم گھبرارہے ہوتے تو اسلام آباد کا رخ نہ کرتے، ملک ان حالات کا متحمل نہیں تو حکومت کو فارغ کریں، حکومتی بیانات کہ معاملات افہام سے حل ہوں گے ، صرف تسلیاں ہیں۔

جے یو آئی کے سربراہ نے مطالبہ کیا حکومت دو سے تین ماہ میں فوری الیکشن کرائے، پی ٹی آئی دوبارہ الیکشن جیتی توہم پھرسڑکوں پرآئیں گے، کسی بھی قسم کا کمیشن یا کمیٹی قبول نہیں، حکومت سے مذاکرات نہیں ہورہے، ہم ٹائم پاس کر رہے ہیں۔

حکومت سنجیدہ لے ورنہ یہ مارچ انہیں گلے پڑے گا، حافظ حسین احمد


دوسری جانب جے یو آئی کے رہنما حافظ حسین احمد نے کہا ہے کہ حکومت سنجیدہ لے ورنہ یہ مارچ انہیں گلے پڑے گا، سنجیدہ نہیں لیا گیا تو ماڈل ٹاؤن بھول جائیں گے، گلی گلی کوچہ کوچہ خطرناک صورتحال ہوگی ، قانون نافذ کرنے والوں پر حملہ نہیں کریں گے، لاشیں اٹھانے کے لئے تیار ہیں۔

مزید پڑھیں :  دھاندلی الزامات کی تحقیقات کیلئے حکومت عدالتی کمیشن بنانے پر رضامند

یاد رہے گذشتہ روز مولانا مارچ کے پیش نظر وزیراعظم عمران خان نے دھاندلی کی تحقیقات کیلئے جوڈیشل کمیشن بنانے پر رضامندی ظاہر کی تھی اور اپوزیشن کو  پارلیمانی کمیٹی کو فعال کرنے کی دعوت بھی دی گئی تھی۔

ذرائع کے مطابق حکومت نے اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی کے ذریعے مولانا فضل الرحمان کو براہ راست پیشکش کی تھی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں