The news is by your side.

Advertisement

اسمگلنگ کی روک تھام کے لیے ایف بی آر نے اہم فیصلہ کرلیا

اسلام آباد: فیڈرل بورڈآف ریونیو (ایف بی آر) نے مقامی مارکیٹوں میں موجود اسمگل شدہ سامان کے خلاف بڑی کارروائی کا فیصلہ کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایف بی آر کی جانب سے اسمگلنگ کی روک تھام کے لئے ڈائریکٹوریٹ آف کسٹمزانٹیلی جنس اینڈانویسٹی گیشن اور ان لینڈریونیو کے افسران پر مشتمل مشترکہ ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں۔

یہ ٹیمیں شاپنگ پلازہ اور مقامی مارکیٹوں میں جا کر درآمدی سامان کی جانچ پڑتال کریں گی۔ ایف بی آر حکام کے مطابق کارروائی کا آغاز یکم ستمبر 2019 سے کیاجائے گا۔

ایف بی آر کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ دکانوں پر چیکنگ کے دوران دکانداروں سے درآمدی اشیاء کے دستاویزات طلب کئے جائیں گے۔

کراچی: گارمنٹس کی دکانیں بھی ایف بی آر کے ریڈار پر آ گئیں

دستاویزات کی عدم دستیابی کی صورت میں دکانداروں کو مناسب وقت دیا جائے گا تاکہ دکاندار اس سلسلے میں جواب دے سکیں تاہم ایف بی آر نے ممبر کسٹمز (آپریشن) اور ممبر (آئی آرآپریشن) کو مشترکہ ٹیموں کی نگرانی کرنے کی ہدایات جاری کی ہیں۔

ایف بی آر کی انٹیلی جنس اینڈانویسٹی گیشن کے کسٹمز اور ان لینڈ ریونیو کے ڈائریکٹرز کو ہدایات جاری کردی گئی ہیں کہ وہ مشترکہ ٹیمیں تشکیل دیں۔

ایف بی آر کے مطابق اسمگلنگ کی وجہ سے قومی خزانے کو بھاری نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے جبکہ مقامی انڈسٹری بھی اس سے بری طرح متاثرہورہی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں