The news is by your side.

Advertisement

فٹیف کی شرائط کی تکمیل میں ایف بی آر کا کلیدی کردار

ایف بی آر کا کہنا ہے کہ فٹیف کی شراط کی تکمیل میں ایف بی آر کا کلیدی کردار ہے جس نے فٹیف کی کم از کم 8 شرائط کی تکمیل اور عملدرآمد کیلیے اقدامات اٹھائے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق ایف بی آر کا کہنا ہے کہ فٹیف کی شراط کی تکمیل میں ایف بی آر کا کلیدی کردار ہے جس نے فٹیف کی کم از کم 8 شرائط کی تکمیل اور عملدرآمد کیلیے اقدامات کیے اور اس کیلیے منی لانڈرنگ اور ٹیکس جرائم کی تحقیقات سے متعلق اہم کردار ادا کیا۔

فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ایف بی آر نے اینٹی منی لانڈرنگ اور کاوٴنٹر فنانشل ٹیرر ازم کے احکامات جاری کیے اس کے ساتھ ہی رقوم کی اسمگلنگ کی روک تھام کے لئے سرحد کے دونوں اطراف نگرانی کا نظام سخت کیا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ایف بی آر ے رقوم کی اسمگلنگ روکنے کے لئے تمام ممکنہ ذرائع کو بروئے کار لاتے ہوئے نظام تشکیل دیا اور اسی کے ساتھ منی لانڈرنگ اور ٹیکس جرائم سے نمٹنے کے لئے بہت سی تحقیقات مکمل کیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (فیٹف) نے پاکستان کے تمام عملی اقدامات کا اعتراف کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان نے گرےلسٹ سے نکلنےکی تمام شرائط پوری کر دی ہیں۔

جرمنی کے دارالحکومت برلن میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے تین روزہ اجلاس کا اعلامیہ جاری کر دیا گیا ہے۔اعلامیہ کے مطابق پاکستان نے ایف اےٹی ایف کے 34نکات پر عملدرآمد کر لیا ہے پاکستان نےدونوں ایکشن پلان پروقت سے پہلے عملدرآمد کیا۔

اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ایف اےٹی ایف کا وفد جلد پاکستان کا دورہ کرے گا جس کے لیے کورونا کی صورتحال دیکھ کر پاکستان کا دورہ کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: ‘پاکستان نے گرےلسٹ سے نکلنے کی تمام شرائط پوری کر دیں’

صدرفیٹف کا کہنا ہے کہ 2 سال میں 5 مرتبہ انسداد دہشت گردی اقدامات کا جائزہ لیا پاکستان نے دہشت گردوں مالی معاونت روکنےکیلئےبہترین اقدامات کیے جب کہ پاکستان نےانسدادمنی لانڈرنگ کیلئے بہترین پیشرفت کی ہے۔

 

Comments

یہ بھی پڑھیں