The news is by your side.

Advertisement

وفاقی کابینہ کی زیادتی کے مجرمان کیلئے کیسٹریشن قانون لانے کی منظوری

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس میں زیادتی کے مجرمان کیلئے کیسٹریشن قانون لانے کی منظوری دیدی جبکہ بعض وزراء نے ریپ مجرمان کو سرعام پھانسی پر لٹکانے کی تجویز دی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس جاری ہے ، جس میں ملکی و سیاسی سمیت کورونا صورتحال پر غور کیا گیا ، اجلاس میں زیادتی کے واقعات کی روک تھام کیلئے قانون سازی پر بھی بحث ہوئی۔

کابینہ نے زیادتی کے مجرمان کی سخت سزاؤں پر مشتمل سفارشات اور زیادتی کے مجرمان کیلئے کیسٹریشن قانون لانے کی اصولی منظوری دے دی ، وزیراعظم نے کہا کہ سنگین نوعیت کا معاملہ ہےقانون سازی میں تاخیر نہیں کریں گے ، عوام کے تحفظ کیلئے واضح ، شفاف انداز میں قانون سازی ہو گی اور یقینی بنایا جائے گا کہ سخت سے سخت قانون کا اطلاق ہو۔

اجلاس میں بعض وزرا نے زیادتی کےمجرمان کی پھانسی کی سزاقانون کاحصہ بنانےکامطالبہ کیا اور رائے دی کہ ریپ مجرمان کوسر عام پھانسی پر لٹکایا جانا چاہیے، فیصل واوڈا،اعظم سواتی ،نورالحق قادری نے بھی پھانسی کی حمایت کی۔

وزیراعظم نے اپنی رائے میں کہا کہ ابتدائی طورپر کیسٹریشن قانون کی طرف جاناہوگا، قانونی ٹیم کی جانب سےریپ قانون آرڈیننس کےمسودےپرکام مکمل کرلیاگیا ہے ، جس میں خواتین پولیسنگ، فاسٹ ٹریک مقدمات اور گواہوں کاتحفظ بنیادی حصہ ہوگا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ متاثرہ خواتین یابچےبلا خوف وخطرشکایات درج کراسکیں گے، متاثرہ خواتین، بچوں کی شناخت کےتحفظ کاخاص خیال رکھاجائے گا ، ہم نے اپنے معاشرے کو محفوظ ماحول دینا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں