The news is by your side.

Advertisement

وفاقی کابینہ نے کالعدم ٹی ایل پی کی نظر ثانی درخواست پر کمیٹی کی تشکیل کی منظوری دے دی

اسلام آباد : وفاقی کابینہ نےکالعدم ٹی ایل پی کی درخواست پر کمیٹی کی تشکیل کی منظوری دے دی، کمیٹی وزارت داخلہ کی جانب سے تشکیل دی جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ملکی تاریخ میں زیادہ کابینہ اجلاس موجودہ حکومت میں ہوئے، پی ٹی آئی دورمیں ابتک226میٹنگ کابینہ کی ہو چکی ہیں جبکہ ن لیگ کے دور میں صرف 23میٹنگز ہوئی تھیں اور کابینہ کمیٹی کی ایک بھی میٹنگ پیپلزپارٹی دورمیں نہیں ہوئی۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے معاشی ٹیم کو خراج تحیسن پیش کیا اور کہا معیشت ابھی استحکام کی طرف بڑھ رہی ہے جبکہ فلسطین کے مسئلے پر پاکستان نے قائدانہ کردار ادا کیا ، جس پر وزیراعظم نے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی اور وزارت خارجہ کو خراج تحسین پیش کیا۔

وفاقی وزیر اطلاعات نے بتایا کہ ترکی اور سعودی عرب کے تعلقات میں بہتری آرہی ہے ، مسلم امہ میں رنجشیں کم ہونے سے دنیا میں استحکام آئے گا اور رنجشیں کم ہونےسے فائدہ مسلم امہ کو بھی ہوگا۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے حوالے سے انھوں نے کہا الیکٹورل اصلاحات پر بابراعوان نے بریفنگ دی، الیکٹرانک ووٹنگ مشین اہم اصلاحات کا حصہ ہے ، الیکشن کمیشن کے فیس بک پیج پررپورٹ پر کابینہ نےتشویش کااظہار کیا، ہم الیکشن کمیشن کی جانب سے کارروائی کے منتظر ہیں، چیف الیکشن کمنشر کو اس رپورٹ پر وضاحت دینی چاہیے۔

اوور سیز پاکستانیوں سے متعلق فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ اوور سیز پاکستانیوں کا ووٹ ایجنڈے کا اہم حصہ ہے، 85لاکھ اوورسیز پاکستانیوں کے پاس اسوقت نائکوپ کارڈ ہے۔

وفاقی وزیر نے بتایا کہ کالعدم ٹی ایل پی کی جانب سے نظرثانی کی درخواست دی گئی ہے، کابینہ نےکالعدم ٹی ایل پی درخواست پر کمیٹی کی تشکیل کی منظوری دی ہے، کمیٹی وزارت داخلہ کی جانب سے تشکیل دی جائے گی۔

اجلاس میں فیصلوں کے حوالے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ کابینہ نے پی ٹی وی کی نئے بورڈ اور کیپٹن (ر)منیر اعظم کو چیئرمین پاکستان ٹوبیکو بورڈ تعیناتی کی منظوری دے دی ہے اور سی پیک سےمتعلقہ چینی شہریوں کیلئےخصوصی ویزہ پیکیج منظور کیا گیاہے جبکہ کورونا سے متعلق سامان بوسنیا بھجوانے کا فیصلہ کیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں