The news is by your side.

Advertisement

وفاقی شرعی عدالت کا سود کے خلاف تحریری فیصلہ جاری

اسلام آباد : وفاقی شرعی عدالت نے ہر قسم کا ربا سود اور انٹرسٹ غیر شرعی قرار دے دیا، فیصلے میں تمام سودی قوانین یکم جون سے غیر مؤثر ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی شرعی عدالت نے سود کے خلاف تحریری فیصلہ جاری کردیا ، جس میں وفاقی شرعی عدالت نےہر قسم کا رباسود اورانٹرسٹ غیر شرعی قرار دے دیا ہے۔

وفاقی شرعی عدالت کے فیصلے میں تمام سودی قوانین یکم جون سے غیر مؤثر ہوجائیں گے۔

تحریری فیصلے میں وفاقی شرعی عدالت نے سودی قوانین میں 31 دسمبر 2022 تک ترامیم کی ہدایت کرتے ہوئے ملک کو 31 دسمبر 2027 تک ربا فری بنانے کا حکم دے دیا۔

عدالت کے فیصلے کا اطلاق بینکوں سے آج تک لیے گیے قرضوں پر نہیں ہوگا۔

یاد رہے وفاقی شرعی عدالت نے انیس سال بعد کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے ملک میں رائج سودی نظام کو خلاف شرع قرار دیتے ہوئے کہ ربا اور سود سے متعلق قوانین شریعت سے متصادم ہیں۔

عدالت نے حکومت کو معاشی نظام شریعت سے ہم آہنگ کرنے کے لیے قوانین میں فوری ترامیم کی ہدایت کرتے ہوئے ربا سے پاک بنکاری نظام قائم کرنے، اندرونی و بیرونی قرضوں اور آئی ایم ایف، ورلڈ بنک سمیت بین القوامی اداروں سے لین دین سود سے پاک بنانے کے لیے پانچ سال کی مہلت دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں