spot_img

تازہ ترین

ایاز صادق قومی اسمبلی کے اسپیکر منتخب

مسلم لیگ ن کے سردار ایاز صدیق قومی اسمبلی...

کمالیہ: بارش میں گھر کی چھت گر گئی، ماں باپ اور بیٹا جاں بحق

کمالیہ کے علاقے فاضل دیوان میں مسلسل اور تیز...

حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں اضافہ کردیا

نگراں حکومت نے پیٹرول کی قیمت میں 4 روپے...

پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر امریکا نے صاف انکار کر دیا

پاکستان ایران گیس پائپ لائن منصوبے پر امریکا نے...

خاتون سیاح کیساتھ جنگل میں زیادتی، دوست کو درخت سے باندھ دیا گیا

خاتون سیاح کو زبردستی جنگل میں لے جاکر زیادتی کا نشانہ بنایا گیا، اس دوران مرد دوست کو درخت سے باندھ کرتشدد کا نشانہ بھی بنایا گیا۔

بھارت میں ایک اور اندوہناک واقعہ پیش آیا ہے جس میں مغربی بنگال کے علاقے ڈیگاہ میں خاتوں سیاح کو جنگل میں اس کے دوست کے سامنے زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔ دو ملزمان 23 سالہ لڑکی کو گھسیٹتے ہوئے جنگل میں لے کر گئے۔

مذکورہ واقعہ 3 فروری کو رات 11 بجے کے قریب پیش آیا جب خاتون اپنے مرد دوست کے ہمراہ ماہی سدال سے مغربی مدناپور کی طرف سفر کرنے کی تیاری کررہی تھی۔

دونوں ملزمان نے سیاح خاتون کو کم قیمت میں کمرہ کرائے پر دلانے کا لالچ دیا تھا۔ ڈیگاہ پولیس نے بتایا کہ خاتون اور اس کا دوست ہوٹل کی تلاش میں تھے کہ دنوں ملزمان ان تک پہنچے اور انھیں تعاون کی پیشکش کی۔

ملزمان نے دونوں سے جھوٹ بولا کہ ہوٹل یہاں سے دور ہے اور انھیں اپنی موٹر سائیکل پر بٹھا کر جنگل میں لے گئے جہاں انھوں نے مبینہ طور پر خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا اور اس کے دوست کو بری طرح مارا پیٹا۔

بھارتی اخبار کی رپورٹ کے مطابق دونوں ملزمان نے خاتون کو برہنہ ہونے کے لیے کہا جب اس نے مزاحمت کی تو اسے گھسیٹتے ہوئے جنگل میں لے گئے۔ انھوں نے خاتون کے دوست کو درخت سے باندھ کر اس کے بے ہوش ہونے تک تشدد کا نشانہ بنایا۔

اس سلسلے میں ڈیگاہ پولیس نے دنوں مشتبہ ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے، انھیں پیر کو سب ڈویژنل کورٹ کے سامنے پیش کیا گیا جہاں ان کی شناختی پریڈ بھی کی گئی۔

عدالت کو زیادتی کا شکار خاتون نے اپنا خفیہ بیان ریکارڈ کرادیا ہے۔ جج نے دونوں ملزمان کو 14 دنوں کے لیے پولیس کی جوڈیشل کسٹڈی میں دے دیا ہے۔

Comments

- Advertisement -